بریکنگ نیوز

الیکشن کمیشن وزیراعظم کی دی گئی انتخابات کی تاریخ سے غیرمطمئن

ecp-to-start-revision-of-electoral-rolls-voters-registration-from-10th-august-1470056970-1385.jpg

اسلام آباد: الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کو ذرا سا بھی اندازہ نہیں کہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو آئندہ عام انتخابات کے لیے 15 جولائی 2018ء کی تاریخ کس نے بتائی، دوسری جانب الیکشن کمیشن 15 جولائی کو عام انتخابات کرانے کے معاملے میں غیر مطمئن نظر آ رہا ہے۔

الیکشن کمیشن کے باخبر ذرائع نے بتایا ہے کہ اس معاملے میں کمیشن سے مشورہ کیا گیا اور نہ ہی اسے یہ علم ہے کہ وزیراعظم نے الیکشن کی تاریخ کا اعلان کیسے کر دیا۔

قانون کے تحت، الیکشن کمیشن اس معاملے پر سمری پیش کرے گا، جس کے بعد صدر مملکت الیکشن کی تاریخ کا اعلان کریں گے۔

ذرائع نے وضاحت دی کہ جب تک اسمبلیاں آئندہ برس مئی کے وسط تک وقت سے پہلے تحلیل نہیں کی جاتیں، اُس وقت تک ای سی پی کے لیے 15 جولائی کو الیکشن کرانا ممکن نہیں۔

موجودہ قومی اسمبلی اور حکومت کی مدت یکم جون 2018ء کو ختم ہوگی۔ اگر اسمبلیوں کو وقت سے پہلے تحلیل نہ کیا گیا تو آئندہ انتخابات 60 روز کے اندر کرانا ہوں گے یعنی یکم اگست 2018ء کو مدت کی تکمیل تک۔ وزیراعظم نے کہا ہے کہ حکومت اپنی مدت مکمل کرے گی اور اس طرح حکومت کی مدت یکم جون 2018ء کو ختم ہوگی جبکہ آئندہ انتخابات 15 جولائی کو ہوں گے۔

24ویں آئینی ترمیم کی منظوری سے جلد الیکشن کے راستے بند

ای سی پی کے ذرائع کا کہنا ہے کہ اسمبلیوں کی مدت کی تکمیل پر کمیشن جولائی 2018ء کی کسی بھی تاریخ پر الیکشن کرانے کی تجویز پیش کر سکتا ہے۔

امیدواروں کی حتمی فہرست مکمل ہونے کے بعد کمیشن کو 21 دن درکار ہوں گے تاکہ پرنٹنگ کارپوریشن آف پاکستان سے بیلٹ پیپرز چھپوائے جا سکیں۔

ایک ذریعے کا کہنا تھا کہ اگر 60 دن کی مدت کو کم کرکے 45 دن کر دیا جائے، جیسا کہ وزیراعظم نے اعلان کیا ہے، تو اس سے کمیشن کے لیے مسائل پیدا ہوجائیں گے۔

عمران خان کا حلقہ بندیوں کا عمل 90 روز میں مکمل کرانے کا مطالبہ

انہوں نے مزید کہا کہ اگر گزشتہ عام انتخابات کی بات کریں تو اس وقت الیکشن کمیشن کو پرنٹنگ کارپوریشن آف پاکستان سے آگے دیکھنا پڑا تھا، جس پر پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے ایشو پیدا کر دیا تھا۔

خیال کیا جاتا ہے کہ وزیراعظم کی جانب سے اعلانیہ تاریخ شاید مسلم لیگ (ن) کا فیصلہ ہوگا۔ لیکن الیکشن کمیشن کو یہ تاریخ موزوں نہیں لگتی اور ادارہ چاہتا ہے کہ ماضی کے برعکس عام انتخابات کسی بھی تنازعات سے پاک ہوں۔

دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کے ذرائع کا کہنا ہے کہ زیادہ سے زیادہ 60 دن کی مدت کم کرکے 45 دن کرنے کا مقصد یہ ہے کہ امیدوار اور سیاسی جماعتیں اپنی انتخابی مہم پر زیادہ پیسے خرچ نہ کریں

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ