بریکنگ نیوز

مَردِ حُرّ بنام سازشی عناصر

ZARDARI-1.jpg

تحریر: آزاد بُزدار

بی بی شہید کی دسویں برسی کے موقع پر مرد حر آصف علی زرداری نے گڑھی خدا بخش میں جو باتیں گڑھی کے شہداء کے غم گساروں، پی پی پی کے جانثاروں اور سیاسی کارکنوں کے عظیم اکٹھ میں کیں وہ نہائت ہی اہمیت کی حامل ہیں، جناب آصف علی زردای صاحب کے خطاب کو اگر تین حصوں میں تقسیم کر کے دیکھا جائے تو غلط نہ ہوگا:

1۔ پہلی بات جو صرف پی پی پی کے سیاسی کارکنوں کے لئے تھی کہ مجھ سمیت کئی لیڈر آئیں گے، جائیں گے پر نام جو باقی رہے گا وہ بھٹو کا ہی رہے گا، اس کے علاوہ زرداری صاحب نے بتایا کہ کس طرح انہیں عوام سے دور رکھنے کے لئے صدارتی ایوان کو عوام سے علیحدہ کر دیا گیا۔

ماضی میں ایک طرف زرداری صاحب کا میڈیا ٹرائل ہوتا رہا جو ابھی تک جاری ہے تو دوسری طرف ایوان صدر کو عوام سے دور رکھا گیا۔ جب اقتدار ختم ہوا تو سیکیورٹی تھریٹس کے نام پر زرداری صاحب سمیت پی پی پی کی لیڈرشپ کو عوام سے دور رکھا جا رہا ہے، یہی ہتھکنڈے بی بی شہید کے خلاف استعمال کئے گئے۔ جب پاکستانی عوام کی محبوب اور نڈر رہنما ان کے ان اچھوتے ہتھکنڈوں میں نہ آیئں اور عوام سے رابط منقطع نہ کیا تو یہ بزدلی پر اتر آئے اور پاکستان کو ایک عظیم رہنما سے محروم کر دیا گیا۔

2۔ دوسری بات جو مردحُر نے کی، وہ ان سازشی عناصر اور ان کے مہروں کیلئے پیغام تھا، جنہوں نے ماضی میں شہید بھٹو، بی بی شہید سے لے کر پی پی پی کے جانثاروں اور ورکروں تک کے خلاف سازشی نظریہ کا پرچار کیا، کبھی کرائے کے مولویوں سے فتوے دلوائے تو کبھی بی بی جیسی محب وطن منتخب رہنما کو یہ کہ کر حساس مقامات کے وزٹ سے روکا گیا کہ آپ سیکورٹی تھریٹ ہیں اور جو جبر پی پی پی کے ورکروں پر کیا گیا وہ بھی تاریخ کا حصہ ہے۔ انھی مذکورہ عناصر کے نام آصف علی زرداری نے کہا کہ ہم تناؤ نہیں چاہتے، ہم سیاسی لوگ ہیں، فہم و فراست سے کام لینے والے لوگ ہیں اور مزید یہ کہ ہم نہیں چاہتے کہ پی پی پی کے ورکرز کو کسی جنگ میں ڈالیں، ورکرز مجھے میری جان سے عزیز ہیں، اب تم بھی باز آ جاؤ، ہم بھی ایک جمہوری سیاسی لائحہ عمل لے کر آگے طرف بڑھ رہے ہیں، ایک کامیاب اور ترقی پسند معاشرے کی راہ میں روڑے اٹکانا چھوڑ دو۔۔۔۔۔

3۔ تیسری بات جو آصف علی زرداری صاحب نے ان سازشی عناصر، ان کے گندے انڈوں اور ان کے نوزائیدہ چوزوں سے کہی، جو کبھی کسی اُنگلی کے انتظار میں تو کبھی دوغلے انصاف کی انتظار میں رہتے ہیں، یہی وہ عناصر جو کسی آمر کو اپنی عمر لگ جانے کی خوشامدی دعا کر کے اقتدار کیلئے چور دروازہ استعمال کرتے آئے ہیں۔ آصف علی زرداری نے ببانگ دہل کہا کہ اگر تم اپنی سازشوں سے باز نہ آئے تو ہم مزاحمت کرنا جانتے ہیں، مزاحمت تو پاکستان پییپلز پارٹی کی میراث ہے، جیلوں سے تم ڈرتے ہو ہم تو نہیں ڈرتے۔

پاکستان پییپلز پارٹی کی مزاحمت کی تاریخ کسی سے پوشیدہ نہیں، آصف علی زرداری سازشی عناصر کو اور ان لوگوں کو جو ووٹ گنتے ہیں اور الیکشن کرواتے ہیں، جو عوام کے منتخب نمائندوں کی بجائے سازشوں کے ذریعے ریاست کے ٹھیکیدار بنے پھرتے ہیں، کو یہ چتاونی دے رہے تھے کہ بس اب بہت ہو گئی، اب کی بار اگر کوئی ہمارے ساتھ زیادتی ہوئی یا “آر اوز” الیکشن ہوئے تو ناقابل برداشت ہوگا۔

یہ چتاونیاں وہ آصف علی زرداری دے رہے تھے، جنہوں نے ان سازشی عناصر کا جبر برداشت کیا اور بارہ سال تک جیل کاٹی اور ان کے دائیں بائیں کندھے کے ساتھ کندھا ملا کر ان کی بیٹیاں بیٹھی تھیں، جن کی ماں کو انہی عناصر نے پالتو لوگوں کے ذریعے شہید کرایا ان کے نانا کو پھانسی دلوائی اور ان کے دوماموؤں کو بے دردی سے راہ سے ہٹایا گیا۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ