بریکنگ نیوز

پیپلز پارٹی کی سال 2017ء کی کارکرردگی پر جائزہ رپورٹ

1471903_624449690935651_676884472_n.jpg

تحریر: صفدر کلاسرہ (بول نیوز)

پاکستان پیپلز پارٹی سال 2017ء میں باقی تمام سیاسی پارٹیوں سے زیادہ متحرک اور مضبوط نظر آئی۔ اس سال پیپلز پارٹی نے حکومت کو قومی معاملات میں ٹف ٹائم دینے اور اپوزیشن کو اکٹھا کرنے میں سب سے اہم کردار ادا کیا۔

سال کے آخر میں پیپلز پارٹی نے اسلام آباد میں پارٹی کے پچاسویں یوم تاسیس پر گولڈن جوبلی کے موقع پر تاریخی جلسہ کر کے وفاقی علامت ہونے کا ثبوت دیا۔ پارٹی نے الیکشن کمپئین کے سلسلے میں پہلا جلسہ 15 دسمبر کو ملتان میں کیا، جو ملتان کی تاریخ کا سب سے بڑا جلسہ تھا۔ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے جنوبی پنجاب الگ صوبے کا الیکشن سلوگن دے کر باقی پارٹیوں کے لیے خطرے کی گھنٹی بجا دی ہے۔ جبکہ محترمہ بے نظیر بھٹو شہید کی دسویں برسی پر ان کے بچوں بلاول، بختاور اور آصفہ کے آنسوؤں نے نہ صرف پارٹی ورکرز کے جذبات کو ابھارا بلکہ بلاول کی جوشیلی تقریر نے جیالوں اور جیالیوں میں نئی روح پھونک دی ہے۔ اسی سال مردان، لوئر دیر، پشاور، ایبٹ آباد، کاغان، چنیوٹ، ساہیوال، رحیم یار خان، دادو اور حیدر آباد کے بڑے جلسے کر کے یعنی برف پوش پہاڑوں سے لے کر سمندر تک ملک گیر پاپولر پارٹی ہونے کا ثبوت دے دیا ہے۔

خیبر پختونخوا سے نور عالم اور اقبال مہمند نے پیپلز پارٹی کو خیرباد کہا جبکہ خواجہ محمد خان ہوتی، اورنگزیب ہوتی، اسد گلزار، ضیاللہ آفریدی، داؤد خٹک، نواب زادہ تیمور، شریف خان اور ارباب عثمان نے پیپلز پارٹی میں شمولیت اختیار کی۔ سینٹرل پنجاب میں پارٹی سے نذر محمد گوندل، فردوس عاشق اعوان، امتیاز صفدر وڑائچ اور مرتضٰی ستی نے پیپلز پارٹی چھوڑی جبکہ فیصل صالح حیات اور اسد صالح حیات نے پارٹی کو جوائن کیا۔ جنوبی پنجاب سے معظم جتوئی اور عامر وارن نے پارٹی سے منہ موڑ لیا تو صفدر بھٹی، اللہ بخش سامٹیہ، منظور جوتہ، سمرا فیملی، میجر تنویر اور میاں ساجد پرویز پی پی پی میں شامل ہوئے۔ سندھ سے پارٹی میں امتیاز شیخ، جام مدد علی، اسماعیل راہو، حکیم بلوچ اور ناز بلوچ کا مزید اضافہ ہوا۔ میر ظفراللہ جمالی اور ذوالفقار کھوسہ نے بھی پیپلز پارٹی جوائن کرنے کا گرین سگنل دے دیا ہے۔

سال کے آخری ایام میں ڈاکٹر طاہرالقادری سے سابق صدر آصف علی زرداری کی ملاقاتوں اور پیپلز پارٹی کی پاکستان عوامی تحریک کی اے پی سی میں شرکت اور متوقع احتجاج میں ساتھ دینے کی حامی نے مشکل میں سانس لیتی مسلم لیگ (ن) کی حکومت کے لیے سرخ بتی جلا دی۔

پاکستان پیپلز پارٹی کا اگر وطن عزیز کی باقی سیاسی پارٹیوں کے ساتھ تقابلی جائزہ لیا جائے تو ووٹ، جمہوریت اور آئین کی حرمت کے لیے جدوجہد کے سلسلے میں پیپلز پارٹی بلاشبہ اوّل درجے پر کھڑی ہے۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ