بریکنگ نیوز

حسب و نسب

26543246_1777527282279450_763860009_o-507x540-507x540-1.jpg

تحریر عبدالرحمن

مان لینا چاہیے کہ انٹرنیٹ جیسے علم کے خزانے سے ہم عام لوگ بھی فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ اس کی پہنچ کا اندازہ ہونے کے بعد تو اس کے استعمال سے غفلت جرم کے دائرے میں آتی ہے۔ کچھ دن پہلے اپنی ساس سے ایک الجھن کا ذکر کیا تو اس نے حیرت سے پوچھا تم گوگل نہیں کرتے؟ ساس صاحبہ کی عمر کا ذکر کیا کرنا بہرحال میں 50 سال کا ہوں باقی آپ خود سمجھدار ہیں۔
آج صبح واٹس اپ پے آئےایک پیغام نے مجھے ایکدفعہ پھرجھنجھوڑا جس میں ایک عقل مند آدمی کا قصہ تھا جس نے بادشاہ کے حسب نصب کا پتا صرف اس کے دیے گئے انعامات سے لگا لیا۔ ہم انٹرنیٹ کے ہوتے ہوئے بھی اگر اپنے بادشاہوں کے دیے گئے انعام واکرام سے ان کے آباو اجداد کا اندازہ نہ لگاسکیں تو بڑے بدھو ہوں گے۔
ایپل کی سری بڑی تیز سہی اسے رہنے دیتے ہیں۔ کیونکہ وہ بھین دی سری کی مقبولیت کے بعد سے تھوڑی سی متنازعہ اور مشکوک ہوگئی ہے اور زنانہ نام کی وجہ سے بیگم کے قہر کا خطرہ بھی ہے۔ اس لیےگوگل ہی بہتر انتخاب ہے۔ ساس بھی خوش، ساس کی بیٹی بھی مطمئن اور مسئلہ بھی حل۔ دنیا تو بنے گی ہی بنے گی آخرت سنوارنےکا سامان بھی ہے۔ اب اصل موضوع پے آتے ہیں:-
1۔ پنجاب کے بادشاہ نے عوام کو سستی روٹی انعام کی۔ گوگل سے آباو اجداد کے بارے میں پوچھا؟ فورا جواب ملا بیکر ہوں گے۔ کیونکہ برصغیر میں بیکر تو ہوتے نہیں، سمجھ گیا وہ نان بائی کہنا چاہتا ہے۔
2۔ سندھ کے بزرگ بادشاہ نے کراچی کے محکمہ صفائی کو پنج سالہ چٹھیاں ایک ہی ہلے میں انعام کر دیں تاکہ وہ روزانہ آرام میں مخل نہ ہوں۔ بھلا گوگل کے دیس میں ایسی سخاوت کہاں؟ اس لیے بے یقینی میں پہلے بھنگی بتایا پھر بولا لگتا ہے ویرانے پسند ہیں اس لیے سادھو بھی ہو سکتے ہیں۔
3۔ کے پی کے اور بلوچستان کے شہزادے اسلام آباد میں گھبراہٹ زدہ خلیفہ وقت کی طرف دیکھ رہے۔ وہاں سے کچھ ملے گا تو اپنا حصہ رکھ کر باقی بانٹ دیں گے۔
4۔ چاروں صوبوں کے چھوٹے چھوٹے باشاہوں سے پہلے جب پورے ملک کا ایک بادشاہ ہوتاتھا۔ اس نے قوم کو آزاد میڈیا انعام میں دیا۔ اب خود پردیس میں اور بریکنگ نیوز کی لگی لت میں قوم یہاں پریشان ہے۔ اس سوال پے گوگل نے بھی بڑا وقت لیا شاید اس عنایت سے پہلے بادشاہ نے اس سے مشورہ کیا تھا۔ میں بھی چاہتا تھا وہ جواب نہ ہی دے! کہیں کوئی آزاد میڈیا والا ناراض ہی نہ ہو جائے۔ گوگل نے میری سن لی۔ سکرین پےلکھا آیا! “بھئی ہاتھ تم لوگوں کے ساتھ ہوا ہے ایک آدھ جواب خود بھی ڈھونڈھ لو”۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ