بریکنگ نیوز

امریکہ بہادر سے بھارتی رشتہ داری

received_1845797312114948-1.jpeg

تحریر : شاہد حمید

دوسری جنگ عظیم کے بعد امریکہ بہادر بہت فعال انداز میں بین الاقوامی سیاسی منظر نامے پر اپنی چھاپ قائم رکھنے کی کوشش کرتا رہا۔ تاہم اس چھاپ کو تکمیل اس وقت ملی جب سوویت یونین کا شیرازہ بکھرا اور پہلی بار امریکہ بین الاقوامی طور پر یک طاقتی (Unipolarity) نظام سیاست کو متعارف کروانے میں کامیاب ہو گیا۔وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ یہ نظام خاصا پیچیدہ ہوتا گیا ۔تاہم رفتہ رفتہ دیگر طاقتوں کی اقتصادی اور فوجی بہتری کے باعث اس نظام کو برقرار رکھنا مشکل ہو تا گیا اور اس وقت بین الاقوامی سیاست میں امریکی طاقت کے لئے کئی نئے چیلنجز منہ کھولے کھڑے ہیں جو کثیر طاقتی (Multi polar) نظام کی حقیقیت کو آشکار کرتے ہیں۔اگر چہ امریکہ اب بھی اپنے آپ کو دنیا میں بلا شرکت غیرے سب سے طاقتور ملک تصور کرتا ہے اور اپنے سیاسی تسلط کو قائم رکھنے کے لئے ہر لمحہ سیاسی فوجی اور معاشی حکمت عملی پر کاربند ہے۔حال ہی میں ڈونلڈ ٹرمپ کے ایک غیر ذمہ دار بیان( جس میں انہوں نے پاکستان کو مورد الزام ٹھہراتے ہوئے امریکی ناکامیوں کی پردہ پوشی کی کوشش کی ہے ) پرجہاں بھارت میں خوشیوں کی ڈھولکیں بجائے جانے کی اطلاعات ہیں وہیں اس بیان نے خطے کی دیگر طاقتوں خصوصا روس اور چین کے لئے خطرات کی نئی گھنٹیاں بجانا شروع کر دی ہیں۔ جس کی بنیادی وجہ امریکہ کی اس خواہش کو عملی جامہ پہنانے کی کوششیں ہیں جس میں بھارت کو ایشاء بحرالکاہل (Asia Pacific) میں اپنے حلیف(Ally) کے طور پر تیار کرنا اور نئی ابھرنے والی طاقتوں کو دبائے رکھنے کی جستجو شامل ہے۔پاکستان کے خلاف بیان بازی تو دراصل اس سلسلے کا آغاز ہے ۔درحقیقت امریکہ جانتا ہے کہ چین روس اور پاکستان مستقبل قریب میں کسی بھی وقت ایک جامع حکمت عملی ترتیب دے سکتے ہیں جو اس خطے سے امریکی اثرو رسوخ کے مکمل خاتمہ کا باعث بن سکتے ہیں یہی نہیں بلکہ اس اتحاد کے ساتھ ہی امریکہ کو یورپ اور مشرق وسطی (Europ and Mid East) سے بھی پرے دھکیلاجا سکے گا۔ جس کے بعد بین الاقوامی طور پر امریکہ کی طاقت (American Supermacy) کو مکمل طور پر ختم کرتے ہوئے ایک نئے بین الاقوامی سیاسی ڈھانچے کو ترتیب دیا جانا آسان ہو جائے گا۔یہی وجہ ہے کہ امریکہ کو اس خطہ میں کسی ایسے حلیف کی ضرورت ہے جو اس نئے منظر نامے کو نشوونما پانے سے روک سکے اور بھارت اس کام کے لئے سب سے بہترین انتخاب ہے۔جس کے بعد امریکہ بہادر نے بھارت کو سیاسی شادی کا پیغام ارسال کرتے ہوئے اسے خصوصی درجہ دینے کا عندیہ دیا جسے بھارت نے قبولیت بخشی اور اب دیکھیئے یہ شادی کب تک نبھتی ہے۔۔۔۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ