بریکنگ نیوز

پاکستانی پاسپورٹ101 نمبر پر کیوں؟

IMG_20171221_122610_591.jpg

تحریر آزاداحمد چوہدری

مینلے پاسپورٹ انڈیکس نے اپنی سالانہ رپورٹ جاری کی ہے جس میں پاسپورٹ کی طاقت کا معیار بغیر ویزہ ، ای ویزہ ،یا ویزہ آن رائیول کو قرار دیا گیا۔جس میں جرمنی اس سال بھی پہلے نمبر پر ہے کیونکہ جرمن شہری بغیر ویزہ کہ177 ممالک میں آ جا سکتے ہیں۔اور اسی طرح دیگر یورپی ممالک پہلے نمبروں پر جماں ہیں جن کہ شہر ی آسانی سے پوری دنیا میں گھوم پھر سکتے ہیں ۔دوسری طرف مملکت پاکستان ہے کہ جس کہ شہری حج و عمرہ کی سعادت حاصل کرنے کے لئے بھی ایک لمبے چوڑے مرحلے سے گزرنا پڑتا ہے۔ حالانکہ سر زمین پاکستان کی اکثریتی مسلمان آبادی ہے۔جس کو با آسانی حج و عمرہ کے ویزے مل جانے چاہئیے مگر حیرت ہے ادھر بھی اتنی شرائط رکھی ہوئی ہیں دوست بھائی ملک نے کہ 40 سال سے کم عمر مرد کو اکیلے عمرہ کا ویزہ نہیں جاری ہوتا جس کی وجہ سعودی ملک بتاتا ہے کہ پاکستانی نوجوان عمرہ کہ ویزہ پر آ کر حرم پاک سے نکل کر سعودی عرب میں مزدوری کرتا ہے جو کہ غیر قانونی ہے۔یہ تو ہوئی سعودی عرب کی بات اب متحدہ عرب امارات نے بھی پاکستانیوں کے لیے سیر کا ویزہ صرف ایک ماہ کا رکھ دیا ہے اس کا بھی ملا جلا الزام ہےکہ 3 ماہ اور 6 مہینے آنے والے اکثریتی مزدوری پر لگ جاتے ہیں۔
ہمارے ہاں آزاد کشمیر میں ہر دوسرے گھر سے لوگ دنیا کے ہر ملک میں مقیم ہیں ۔جب وہ وطن واپس آتے ہیں تو ان سے ان ممالک کے حالات کا پوچھتے ہیں تو وہ وہاں کی سب سے اہم چیز قانون کی بالا دستی شہریوں کی حقوق و زمہ داریاں جو شہری پورا کرتے ہیں ۔ٹیکس انشورنس ،اور بلز جو شہری باقاعدگی سے ادا کرتے ہیں اور ان کی مد میں وہاں کی حکومتیں اپنے شہریوں کوکتنی سہولتیں دیتی ہیں تعلیم صحت صفائی ا ورتعمیر وترقیپر کس طرح احتیاط سے عوام کے پیسوں کو خرچ کرتی ہے اور ایک ہم ہیں کہ ہر کام ما شارٹ کٹ رکھا ہوا ہے 70 سال گزرنے کہ بعد بھی سدھرنے کا نام تک نہیں لیتے کرپشن دھوکہ فراڈ وعدہ خلافی جھوٹ قانون شکنی یہ سب ہمارے پسند دیدہ فعل ہیں ۔

اندرون ملک کی بات کریں تو اقتدار کے ایوانوں سے لے کر درجہ چہارم کے چپڑاسی تک تقریبا کم ہی ہوتے ہیں جو کرپشن سے پاک ہوتے ہیں رہی بات ٹیکس انشورنس وغیرہ کی تو ادھر تو بجلی کا بل بھی کم رکھنے کے لئیے بجلی کے محکمہ کے متعلقہ میٹر ریڈر سے منتھلی چکائی جاتی ہے اور پھر رونا رویا جاتا ہے لوڈ شیڈنگ کا ایکسائذ کے دفاتر میں کونسے فرشتے بیٹھے ہوتے ہیں کہ ادھر کرپشن نہ ہو یہاں تو بزرگ پنشنرز سے بھی بابو بھتا لیتے ہیں جو بھتا دیتا ہو اس کو قطار میں نہیں لگنا پڑتا وگرنہ لمبی قطار اور بلاوجہ کے دھکے جو ان کو صرف بھتہ نہ دینے کی صورت میں کھانے پڑتے ہیں ۔

ٓ اب آتے ہیں نقطہ پر کہ ان ممالک کے شہری کیسے اتنی آسانی سے پوری دنیا گھوم سکتے ہین جبکہ وہ سب کے سب تو کل تک تو دنیا میں جنگجوؤاور دہشت پھیلاتے تھے آپس میں لڑائیاں کرتے تھے وہ کیسے اور کیونکر بہتر ہوگئے ہم سے اس کی وجہ جو میرے مطابق ہے قانون کی پاسدای کرنا ہے ایک قانون کی پاسداری ہی تمام مسائل کا حل کرسکتی ہے مگر جب امیر غریب کے لیے قانون ہی الگ الگ ہوں تو معاشرہ کیسے ٹھیک ہوسکتا ہے۔اور پھر اس معاشرے سے اٹھ کر باہر جانے والے کیا کیا گل کھلاتے ہوں گے یہ تو پاکستانی سفارت خانے جو ان ممالک میں ہیں وہی بتا سکتے ہیں اگر ریکارڈ رکھتے ہوں تو۔

ویسے بھی ہم پاکستانی کب پاکستانی پاسپورٹ کو اہمیت دیتے ہیں کہ اس میں بہتری آئے یا نہ آئے ہم پاکستانیوں کا مقصد تو چاہے حکمران سیاستدان ہوں یا بیروکریٹز یا عام شہری سب کی دوڑ یورپ امریکہ کنیڈا بلکہ کہیں بھی ہو کسی بھی ملک میں ہو ماسوائے پاکستان کہ ہو شہریت کی تگ و دو میں لگے ہوتے ہیں۔اس جنون میں کتنے پاکستانی نوجوان ہر روز غیر قانونی طور پر دوسرے ممالک کا رخ کرتے ہیں اس کی کیا وجوھات ہیں یہی لالچ حرص تمنا اور دوسر ے ممالک کی شہریت جس کے لئے اپنی جان خطرے میں ڈالتے ہیں بلکہ کتنے ہی چل بستے ہیں،

ان تمام حالات میں جہاں افرا تفری کا عالم ہو حکمرانوں کی توجہ کا مرکز اقتدار اور اس سے جڑی آسائشیں اور کرپشن ہو نہ کہ انقلابی سوچ ہو جس میں ملک کی معیشت کو درست سمت میں لایا جاسکے ملک کا انفراسٹریکچر تعلیم ہنر صحت و صفائی قانون کی بالادستی ہو پھر معاشرہ اور پھر ملک ترقی کرتے ہیں ۔ان سب کہ بعد یہی کہہ سکتے ہیں کہ پھر بھی اچھا ہےکہ 101 نمبر تو آگیا جی!!!!!
Back to Conversion Tool

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ