بریکنگ نیوز

دھرتی ماں کے نالائق بیٹے

akaas-2.jpg

تحریر: عامر شہزاد
سینیٹ کے الیکشن ہو چکے ۔کون کتنے میں بکا ،کس نے کس کو خریدا اور اب سینیٹ کے چیئرمین اور ڈپٹی چےئرمین کے لئے نو منتخب نمائندگان سینیٹ کی خرید و فروخت کا بازارسجنے والا ہے ۔یہ وہ ’’بازار‘‘ ہے جس میں تمام سیاسی پارٹیوں کے رہنما ایوان بالا میں برتری حاصل کرنے کی ’’ہوس‘‘ مٹانے کے لئے منہ بولے دام دیتے ہیں۔اس تکلیف دہ موضوع پر قلم درازی کرتے وقت اعتزاز احسن کی پڑھی ہوئی نظم یاد آ گئی،’’ دھرتی ہو گی ماں کے جیسی‘‘۔ پاکستان میں آئین کے تحت ایوان زریں یعنی صوبائی اور قومی اسمبلی اور ایک ایوان بالا موجود ہے،جہاں منتخب نمائندگان ’’فیملی ممبرز‘‘ کی طرح دوسرے قومی اداروں کے ساتھ مل کر حکومت چلاتے ہیں ۔مگر افسوس پاکستان پائندہ باد کا نعرہ لگانے والے ان ہی فیملی ممبرز کے ہاتھوں دھرتی ماں اپنا ایک بازو گنوا چکی ہے ۔ اپنوں کے دئے ہوئے زخموں سے دونوں آنکھوں سے بہنے والے آنسوؤں کو اپنے ایک ہی ہاتھ سے صاف کر کر کے نڈحال ہو چکی ہے ،مگرآج بھی یہ اپنی ماں جیسی دھرتی پر حکومت کرنے کی لڑائی میں الجھے ہوئے ہیں ۔ انہوں نے کبھی بھی مل بیٹھ کر ایک دوسرے کی آنکھ میں مادر وطن اور اس کی ترقی کے خواب ڈھونڈنے کی کوشش نہیں کی، اور نہ ہی اپنے گریبان میں جھانک کر اس سنگین غلطی کو تلاشنے کی کوشش کی جس سے اس کا ایک بازو کٹا، بلکہ ہمیشہ اپنے ہی سیاسی بھائی پر تکلیف دہ تنقید کی۔اس کا ہاتھ تھامنے کے بجائے دشمنوں کے ارادوں کو تقویت بخشتے ہوئے اپنے سیاسی بھائی کاجمہوری گلا دبا یا۔ ایک الیکشن جیتتا ہے تو دوسرا طویل دورانئے کا دھرنا دے کر سمجھتا ہے کہ اس نے ہمالیہ سر کر لیا ورلڈ ریکارڈ بنا لیا۔ حالانکہ درپردہ وہ اپنے ہی پاؤں پر کلہاڑی مار رہا ہوتا ہے۔
سابق صدر آصف علی زرداری کو تمام سیاستدان کرپٹ ،خودغرض اور منافقانہ مصالحت کا چیمپئین سمجھتے ہیں۔ان کی نظر میں آصف علی زرداری اس عیار سیاستدان کا نام ہے جو عوام میں اپنی سیاسی ساکھ تو خراب کرچکے مگر وہ عوامی مینڈیٹ رکھنے والے کامیاب صوبائی و قومی رکن کو زر سے خرید نے کا گر جانتے ہیں ،مگر سینیٹ کے الیکشن کے نتائج کے بعد لگتا ہے تقریبا تمام سیاسی پارٹیاں زرداری کے نقش قدم پر چل نکلی ہیں ۔ اگر زرداری صاحب کا طرز سیاست کرپشن کے لبادے میں لپٹا ہوا ہے تو دوسرے سیاسی رہنماؤں نے سینیٹ کے الیکشن میں کامیابی کے لئے جو ہتھکنڈے استعمال کئے کیا وہ درست ہیں؟۔ خیبر پختونخواہ میں پی ٹی آئی کے 12سے 17ایم پی ایز نے مخالف جماعتوں کے امیدواروں کو ووٹ دئے۔ وہاں سے پیپلز پارٹی کے روبینہ خالد اور بہر مند تنگی ان ہی متنازعہ ووٹوں سے کامیاب ہوئے۔نون لیگ16 ارکان کے ساتھ 2سیٹیں کیسے جیت سکی،اور جماعت اسلامی بھی ناکافی ووٹ ہوتے ہوئے 1سیٹ جیتنے میں کیسے کامیاب ہو گئی؟۔ پنجاب میں پی ٹی آئی کے 30ارکان ہیں جبکہ چوہدری سرور کو سینیٹ کے انتخابات میں 44ووٹ پڑ گئے۔پی پی پی کو 18اضافی ووٹ مفت میں تو نہیں پڑے ہوں گے ۔ سندھ اسمبلی میں ایم کیو ایم کے 6ارکان نے پیپلز پارٹی کے ایک رہنما کے لندن دورے کے بعد وفاداریاں تبدیل کر دیں۔بلوچستان کے جو6آزاد امیدوارہیں ان کے تعاقب میں تمام پارٹیاں لگ چکی ہیں۔ میاں نواز شریف اور عمران خان سمیت تمام پارٹی رہنماؤں نے سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے الزامات لگا کر خود اس بات کی تصدیق کر دی کہ وہ 62، 63 پر پورا نہیں اترتے بلکہ یہ کہنا مناسب ہو گا کہ انہوں نے اپنے صادق اور امین ہونے کا سرٹیفکیٹ اپنے ہاتھ سے پھاڑ پھینکا۔
سمجھ نہیں آتی کہ کرپشن کے غلیظ داغ لگی شیروانی پہن کرسینیٹ کے نو منتخب ارکان کس منہ سے حلف اٹھائیں گے۔ دولت کی چمک اور ہوس اقتدار کی طاقت دو ایسے ناسور ہیں جن سے کبھی خیر کی توقع نہیں کی جاسکتی۔سیاستدان اگر واقعی پاکستان کا درد رکھتے ہیں تو ان کو اپنا قبلہ رخ امریکا سے مدینہ کی طرف کرنا پڑے گا ۔کیونکہ آج کل پاکستانی سیاست اتنی زہریلی ہوچکی ہے کہ سیاسی رہنماایک دوسرے پر تنقید برائے تضحیک کے اتنے تیر چلاتے ہیں کہ ان کا آپس میں مل بیٹھنا مشکل ہو جاتا ہے۔ یہی روئیہ ان کے پیروکاروں میں بھی منتقل ہوتا جا رہا ہے۔آج بھی اگر ہمارے سیاسی رہنما اپنے سیاسی اختلافات کو ذاتی نہ بنائیں ،ملک کے مقدس ایوانوں پر لعنت نہ بھیجیں اور مادر وطن کے تقدس کا مشترکہ خیال رکھیں ،مثبت تنقید اور سچی لگن کے ساتھ پاکستان کی تعمیر و ترقی میں ایک دوسرے کا ساتھ دیں تو یقین جانئے پاکستان کا کوئی سیاستدان نااہل نہ ہو کوئی ناکارہ نہ ہوبلکہ ہر رہنما صادق اور امین ہو۔شرط صرف اتنی ہے کہ صدق دل سے سیاستدانوں کو ایک نقطے پر اکٹھا ہو نا پڑے گا تاکہ وہ دنیا میں پاکستان کا اصل مقام بحال کرسکیں۔اس کے باوجود اگر کوئی ’’نااہل ،ناکارہ اور 62،63پر پورا نہ اترئے تو دھرتی ماں اپنا بازو کٹ جانے کا دکھ بھول کر اپنے ان نالائق بیٹوں کوہمیشہ سینے سے لگائے رکھے گی۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ