بریکنگ نیوز

ایف اے ٹی ایف

428976_98290374.jpg

ایف اے ٹی ایف
تحریر عبدالرحمن
بڑی خوشی کی خبر ہوتی ہےجب روزی روٹی کا کوئی نیا ذریعہ، نئی امید ایک ایسے ملک میں جہاں کئی سالوں سے روزگار کے مواقع نہیں بڑھے. ہاں بڑھے ہیں تو عوام کے مسائل اور ٹی وی چینلز کی تعداد۔ مسائل کا تو حکومت کچھ نہیں کر سکی تو ہماری کیا مجال۔ البتہ کچھ لوگ اپنی ی کوشش میں ان ٹی وی چینلز کو جو صرف سنسنی پھیلانے کے مشن پر ہیں سے سخت نالاں ہیں۔ چلیں مان لیا وہ برے ہیں پر یہ بھی تو حقیقت ہے کہ ان سے بہت بڑی تعداد میں خواتیں و حضرات کو ایسے وقت روزگار ملا ہے جب حکومت ساری قوم جانتی ہے کون سے اہم کاموں میں مصروف ہے۔ لیکن یہ اب راز نہیں رہا کہ کن وجوہات کی بناء پر قسمت کی دیوی اپنی ہم جنسوں کو، حضرات پر ترجیح دے رہی ہے۔ ایک اندازے کے مطابق جو کم ازکم 1/3 کی شرح سے ہے۔ خواتین ہی کے درمیان 1/100 کے تناسب سے پلڑا خوب رو دوشیزاوں کے حق میں جھکا ہوا ہے۔ لیکن خوشی کی بات یہ ہے کہ اس بے انصافی پر ان کو بھی اعتراض نہیں جنہوں نے خبروں والے چینلز سے خدا واسطے کی دشمنی پال رکھی ہے۔
چند دن پہلے ایسے ہی کچھ چینلز نے FATF ( مالیاتی نظم ونسق کا بین الاقوامی ادارہ) پے ماحول گرم کرنے کی بڑی کوشش کی لیکن ایسے لگتا ہے جیسے یا تو ان کا مقصد پورا کر دیاگیا ہے یا پھر سیاسی افراتفری میں قسمت آزمائی زیادہ منافع بخش ہونے کا امکان نظر آیا ہے۔ بحرحال میں تو سمجھا ہوں کہ یہ مسئلہ جہاں ملک کے لیے مشکلات کا موجب بنے گا وہیں یہ اس سے کچھ پیشہ وروں کے لیے راشن پانی کا ایک سنہری موقعہ بھی پیدا ہوا ہے! جیسے کیمرے کے لیے ہر دم تیار چند وزراء جن کا کسی معاملے سے تعلق یا علم ہو نہ ہو، اینکرز حضرات جو لائسنس یافتہ عقل کل ہیں ۔ مستقل اور موسمی تجزیہ نگاروں کی فوج، جنہوں نے گوگل تک کو FATF کے بارے میں پوچھ پوچھ کر چکرا دیا ہے۔ سب ہی اپنے اپنے حصے کے لیے پر امید ہیں۔
یہ بھی پتا چلا ہے کہ کچھ منجھے ہوئے لیکن اس بین الاقوامی مقدمے میں نئے مداری، جن میں سے کچھ نے ستاروں سے رابطہ بحال کرلیا ہے، بعض نے عاملوں کو حاضری کا پیغام بھجوایا ہے اور چند ایک نے بابوں اور طوطوں کو بھی تیار کر لیا ہے۔ اس شعبدہ بازی میں بھی زنانہ نمائندگی کی امید ہے۔ ایک دو اپنے کارڈز پر سے گرد چھاڑتی نظر آئی ہیں۔ قصہ مختصر، سب اپنی اپنی پٹاریاں لیے تماشے کے لیے تیار بیٹھے ہیں۔
وہ تو بھلا ہو ہماری قیادت کا جو ہر مشکل وقت میں قوم کی مدد کو پہنچ جاتی ہے۔ اس مشکل وقت میں بھی انہوں نے خبروں میں رہنے کے نہ ختم ہونے والے مقابلے میں، جس میں ابھی تک تو سب چوری چکاری اور دھوکے بازی میں سبقت لینے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں۔ لیکن ایسے معاملات میں گونا گوں مصروفیات کے باوجود وہ قوم کی توجہ ہٹانے میں ہمیشہ کی طرح کامیاب ہوئے ہیں۔ اب ایک چھوٹی سی پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ وہ بے چارےجو FATF پر دوکان سجانے کی تیاری کیے بیٹھے تھے ان کا کیا بنے گا؟

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ