بریکنگ نیوز

2017میں شنگھاہی کے 47,000لوگوں نے جسم اور آنکھ کے عطیات کے لیے رجسٹریشن کروائی۔۔

f1-chinese-gp-2006-downtown-shanghai-by-night.jpg

(خصوصی رپورٹ)

گزشتہ سال 2017میں شنگھائی کے لگ بھگ47,737لوگوں نے آنکھ اور جسم کے دیگر حصوں کے عطیات دینے کے حوالے سے اپنی رجسٹریشن کروائی اور گزشتہ ایک سال کے دوران دس ہزار لوگوں کے فراہم کردا جسمانی اعضاء کامیابی سے مختلف لوگوں کو آپریشن کے زریعے سے لگا ئیں گے۔ گزشتہ ہفتے یکم مارچ کو شنگھائی شہر میں جسمانی عطیات کے حوالے 16ویں سالانہ میموریل ڈے کا انعقاد بھی کیاگیا، اس حوالے سے شنگھائی شہر کے مختلف قبرستانوں میں ریڈ کراس سوسائیٹی آف چائینہ کے زیرِ اہتمام میموریل ایکٹیویٹیز کا انعقاد کیا گیا۔ واضح رہے کہ ریڈ کراس سوسائیٹی آف چائینہ چین کی ان اولین تنظیموں میں سے ایک ہے جس کی جانب سے1982میں پہلی مرتبہ جسمانی اعضاء عطیات کرنے کے عمل کا آغاز کیا گیا۔ اس ضمن میں ریڈ کراس سوسائیٹی آف چائینہ کی جانب سے جسمانی اعضاء کے عطیات کے حوالے سے شہر کے چھ میڈیکل کالجز میں رجسٹریشن سنٹرز قائم کیئے گئے ہیں جبکہ آنکھوں کے کارنیا کے عطیات کے حوالے سے شنگھائی شہر میں چار مختلف جگہوں پر رجسٹڑیشن سنٹرز قائم کیئے گئے ہیں۔ شنگھائی میں آنکھوں اور جسمانی اعضاء کے عطیات کے حوالے سے بسا اوقات بہت ہی جذباتی اور حساس کہانیاں بھی سننے میں آتی ہیں۔ اس حوالے سے سابق ایسوسی ایشئن چیف فزیشن جی ژنجنگ اس حوالے سے ایک جیتی جاگتی کہانی کے راوی ہیں اور انکی یہ کہانی جیاڈنگ ہسپتال سے متعلق ہے اپنی وفات سے قبل جی ژنجنگ اور انکی اہلیہ نے اپنے جسمانی اعضاء وقف کرنے کے حوالے سے رجسٹڑیشن کروائی انکا خیال یہ ہی تھا کہ انکے عطیہ کردے جسمانی اعضاء سے میڈیکل کے طلباء اپنی تعلیم اور ریسرچ کے حوالے سے بہرہ مند ہونگے تاکہ بہتر انداز میں انسانی جسم کے ڈھانچے کو بہتر انداز میں سمجھ سکیں ، انکی اس سو چ کو انکی وفات کے بعد کامیابی سے یقینی بنایا گیا اور جسمانی اعضاء کے ساتھ ساتھ انکی آنکھ کے کارنیا کو آنکھ کی بیماری کے شکار لوگوں کو بھی مہییا کر دیا گیا۔ اس طرح کی دیگر اور کہانیوں کو دیکھتے یوئے شنگھائی شہر میں جسمانی اعضاء اور آنکھ کے کارنیا کو عطیہ کرنے کے حوالے سے دیگر لوگوں میں یہ ہی شوق اور جذبہ ہیدا ہوتا ہے۔ اور امید ظاہر کی جارہی ہے کہ جس طرح سے چین میں سوسائیٹی اعلی اخلاقی اقدار کی پیروی کر رہی ہے اور معاشرہ ایک مثبت انداز میں اخلاقی تہذیب کی جانب گامزن ہے امید کی جا رہی ہے معاشرے میں بہت سے لوگ اس طرح سے جسمانی اعضاء عطیات کرنے کی جانب راغب ہونگے تاکہ ان کے جسمانی اعضاء سے انکی وفات کے بعد معاشرے کے دیگر لوگ مستفید ہوسکیں۔۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ