بریکنگ نیوز

چین کا عام شہریوں کے لیے خصوصی پالیسی کا اعلان

1-3.jpg

(خصوصی رپورٹ)

چین میں بڑے شہروں کے بعد مختلف صوبوں کے چھوٹے شہروں کی جانب سے بھی دیگر صوبوں سے تعلق رکھنے والے ماہرین کی خدمات حاصل کرنے کے حوالے سے پالیسی سازی میں آسانیاں پیدا کرنے کا عمل شروع کر دیا گیا ہے اس حوالے سے چین بھر سے پروفیشنل اور مختلف شعبوں با لخصوص انفامیشن ٹیکنالوجی کے ماہرین کو چھوٹے شہروں میں کام کرنے کی اجازت دینے اور ان علاقوں میں کام کرنے کے لیے راغب کرنے کے لیے بہت سی آسان اور سہل پالسیز کا آغاز کیا گیا ہے اس ضمن میں مشرقی چین کے صوبے جیانگسو کے شہر نانجنگ نے گزشتہ ہفتے اعلان کیا کہ کہ دیگر علاقوں سے آنیوالے ماہرین کو شہر میں ایک ہزار یوآن اضافی دئیے جائیں گے تاکہ شہر کی ڈیویلمپنٹ کے حوالے سے ملک کی بڑی یونیورسٹیز کے گرایجوایٹس کو اس چھوٹے شہر میں کام کرنے کے لیئے راغب کیا جا سکے۔ اسی طرح سے نانجنگ شہر کے منتظمین کی جانب سے شہر کو بہتر اور مربوط انداز میں ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کے حوالے سے دیگر بہت سے اقدامات کا آغاز کیا گیا ہے جن میں سے شہر میں گھروں کی رجسٹڑیشن کے حوالے سے پالیسی سازی میں نرمی کا اعلان کیا گیا ہے اور گھروں کے کرایوں اور انٹرپرینئرشپ الائونسز میں نرمی کا علان کیا گیا ہیاس طرح سے نانجنگ شہر کی انتظامیہ گزشتہ 2017سے دیگر صوبوں سے تعلق رکھنے والے ماہرین اور پروفیشنل لوگوں کی خدمات حاصل کرنے کے لیے سنجیدہ انداز میں کوششوں کو جاری رکھے ہوئے ہیںاس طرح نانجنگ کی طرح دیگر چھوٹے شہروں کی انتظامیہ کی جانب سے بھی مختلف شہروں بالشمول ووہان، ننگ بائو، ژینگ شو، چنگڈو اور ہانگ ژو میں بھی اسی طرح کی بہت سی سہل پالیسز کا آغاز کیا جا چکا ہے۔ اس طرح کی سہل پالیسز کے آغاز سے جہاں ملک کے بڑے شہروں پر آبادی اور دیگر وسائل کے حوالے سے بوجھ ہلکا ہوگا وہیں ملک کے ان چھوٹے شہروں کی جانب سے یونیورسٹی گر ایجویٹس کو مختلف طرح کے پیکجز کا اعلان اس وجہ سے بھی کیا جا رہا ہے کیونکہ ملک کے بڑے شہروں با لشمول بیجنگ اور شنگھائی کی جانب سے گھروں کی خریداری اور گھریو رجسٹریشن کے حوالے سے سخت پابندیاں عائد کرنے کا اعلان کیا جا رہاہے، یوں ان نئے اقدامات کی مدد سے جہاں بڑے شہروں سے آبادی چھوٹے شہروں کی جانب راغب ہوگی وہیں بڑے شہروں سے مختلف شعبوں کے ماہرین بڑے شہروں میں قیام کے بجائے چھوٹے شہروں میں رہنے کو بھی ترجیع دیں گے، اور یوں بڑے اور چھوٹے شہروں میں ترقی اور ڈیلویلپمنٹ میں یکسں انداز میں ترقی کے سفر کو یقینی بنا سکیں گے، گزشتہ ایک دہائی میں دنیا بھر سے بہت سے شعبوں کے ماہرین نے چین کا رخ کیا ہے اور گزشتہ سال میں دنیا بھر سے چھ لاکھ مختلف شعبوں کے ماہرین نے چین کا رخ کیا اس کے مقابلے میں جتنے طلباء چین سے پڑھنے کے لیئے دنیا کی دیگر یونیورسٹیز میں گئے ہیں ان کی تعداد خاصی کم ہے اس ضمن میں چینی صدر شی جنپگ نے بھی گوناگ ڈونگ صوبے کے ڈپٹیز سے ایک پینل ڈسکشن کے موقع پر اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ چین کی اولین ترجیع ڈیولیمپنٹ کے عمل کو مربوط انداز میں ایک تسلسل کو یقینی بنانا ہے جس کے لیے ہن مند ماہرین اور پروفیشنل لوگ بنیادی وسائل کی مانند ہیں اور اس ڈیویلمپنٹ کے لیے جدت پسندی ایک ڈرائیونگ فورس کی مانند ہے۔ ۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ