بریکنگ نیوز

شھید بھٹو کی پھانسی کی رات کے واقعات

158FDAC4-581D-4BFD-AAC7-E36A0DD544C4.jpeg

راولپنڈی جیل کے سابق سپرنٹنڈنٹ ریٹائرڈ کرنل فوج رفیع الدین نے اپنی کتاب میں شھید بھٹو کی پھانسی کی رات کے واقعات کے بارے میں لکھا:
بھٹو صاحب کی پھانسی کا حکم 4 اپریل کو پھانسی سے 8 گھنٹے پہلے موصول ہوا۔بھٹو صاحب پھانسی سے 9 دن پہلے سے جیل میں بھوک ہڑتال پے تھے۔اُن 9 دنوں کے دوران بھٹو صاحب نے کچھ بھی نہی کھایا اور پانی کا ایک قطرہ تک نہی پِیا تھا۔مجھ سے بہت سے لوگ اکثر یہ پوچھتے ہیں کہ بغیر پانی کے تو کوئی انسان 3 دن سے زیادہ زندہ نہی رہ سکتا تو بھٹو صاحب 9 دن تک بنا پانی کے کیسے زندہ رہے؟؟تو میں انکو کہتا ہوں کہ یہ مینے بھی سُنا ہے بنا پانی کے 3 دن سے زیادہ انسان زندہ نہی رہ سکتا،،لیکن میں اس بات کا گواہ ہوں کہ بھٹو صاحب 9 دن تک بنا کچھ کھائے پیئے زندہ تھے،،کیونکہ جیل میں بھٹو صاحب کے سب سے نزدیک میں ہی تھا۔
9 دن کی بھوک اور پیاس کی وجہ سے بھٹو صاحب بے انتہا کمزور ہو چکے تھے اور آخر میں ان سے چلا اور بولا بھی نہی جاتا تھا۔کرنل رفیع نے اپنی کتاب میں مزید لکھا کہ جب بھٹو صاحب کی پھانسی کا حکم موصول ہوا تو میں انکی کال کوٹھڑی میں گیا،وہ کال کوٹھڑی 4*4 فوٹ کی تھی بیحد تنگ جس میں بھٹو صاحب کو رکھا گیا تھا۔مینے بھٹو صاحب کو پھانسی کا حکم نامہ پڑھ کے سنایا کہ چند گھنٹوں بعد آپکو پھانسی دی جائے گی تو بھٹو صاحب نے مجھے دیکھا اور کچھ بھی نہی کہا۔پھانسی کا سننے کے بعد بھٹو صاحب کے چہرے کے تاثرات واضع بتا رہے تھے کہ انکو کسی قسم کا خوف یا ڈر نہی تھا،،،لیکن انکے چہرے سے صرف یہ ظاہر ہو رہا تھا کہ بھٹو صاحب کو اس بات افسوس ضرور ہوا اور جیسے وہ کہنا چاہتے تھے کہ مینے اِس ملک کے لیئے کیا کچھ نہی کیا اور اسکے بدلے میں مجھے پھانسی۔
کرنل رفیع نے لکھا کہ جب پھانسی کا وقت قریب آیا تو مینے بھٹو صاحب جو اُس وقت اسٹریچر پے تھے پوچھا کہ بھٹو صاحب کیا آپ خد چل کر جائیں گے یا آپکو اسٹریچر پے لایا جائے تو بھٹو صاحب نے مجھے کہنے کی کوشش کی لیکن کمزوری کی وجی سے انکی آواز سمجھ نہی آ رہی تھی،،مینے اتنا ضرور سمجھا کہ اس وقت بھٹو صاحب اپنی بیگم نصرت بھٹو کو یاد کر رہے تھے کہ کاش وہ اس وقت میرے ساتھ ہوتی اور مجھے اُٹھنے کے لیئے سہارا دیتی۔
پھر بھٹو صاحب کو اسٹریچر پے پھانسی گھاٹ تک لایا گیا اور جب پھانسی دینے کے انکو اسٹریچر سے اُتارا جا رہا تھا تو بھٹو صاحب کا ایک پائوں قمیص میں پھنس گیا جسکی وجہ سے بھٹو صاحب کی پوری قمیص پھٹ گئی اور انکو اسی حالت میں پھانسی دی گئی۔
کرنل رفیع نے لکھا کہ مینے بھٹو صاحب کے بارے میں ساری باتیں صرف اس لیئے لکھیں کہ قوم کو معلوم ہو سکے کہ انکے لیڈر کیساتھ جیل میں کون کون سے ظلم ہوئے تھے۔میں اللہ سے پناہ مانگتا ہوں کہ ایسا کسی کے ساتھ نہ ہو جو کچھ بھٹو صاحب کیساتھ ہوا اور میں یہ دعا کرتا ہوں کہ خدا کسی کو بھی ایسا منظر نہ دکھائے جو مینے دیکھا تھا۔ کیا تھا۔)
Copied

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ