بریکنگ نیوز

امریکا نے برطانیہ اور فرانس کی مدد سے شام پر حملہ کر دیا

182908_5815048_updates.jpg

دمشق: امریکا نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے قرارداد منظور کرانے میں ناکامی کے باوجود برطانیہ اور فرانس کی مدد سے شام پر حملہ کردیا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے رات گئے اپنے خطاب میں شام کے خلاف فوجی کارروائی کا اعلان کیا، جس کے ساتھ ہی شامی دارالحکومت دمشق میں کئی دھماکے سنے گئے۔

حملوں کے لیے صدر ٹرمپ نے نہتے شہریوں پر شام کی فوج کے کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کو جواز بنایا۔

امریکا اور اس کے اتحادیوں نے دمشق اور حمص کے قریب مختلف فوجی تنصیبات کو نشانہ بنایا—۔فوٹو/ اے پی
خبر رساں ایجنسیوں کے مطابق امریکا کے ٹام کروز اور برطانیہ کے اسٹروم شیڈو میزائلز نے دمشق اور حمص کے قریب مختلف فوجی تنصیبات کو نشانہ بنایا۔

امریکا کے دفاعی حکام کے مطابق حملے میں شام کے سائنسی تحقیقی ادارے اور کیمیائی ہتھیاروں کے ذخیرے کو بھی نشانہ بنایا گیا۔

امریکی میرین کور کے جنرل ڈینفورڈ نے واضح کیا کہ حملوں میں جیٹ طیاروں نے حصہ لیا، روس کو ان حملوں اور اہداف کے بارے میں پہلے سے آگاہ نہیں کیا گیا تھا اور امریکا نے ایسے اہداف کو نشانہ بنایا جہاں روسی افواج موجود نہیں تھیں۔

امریکی وزیر دفاع جیمز میٹس نے بتایا کہ حملے میں اب تک کسی شخص کے مارے جانے کی اطلاع نہیں اور اس بات کا خیال رکھا گیا تھا کہ حملے میں معصوم شہری نشانہ نہ بن جائیں۔

جیمز میٹس کا مزید کہنا تھا کہ شام میں مزید حملوں کا منصوبہ نہیں ہے۔

شام کے تنازع پر برطانیہ کا ہر صورت امریکا کا ساتھ دینے کا اعلان

برطانیہ کی وزارت دفاع نے بھی شام پر حملوں میں جیٹ طیاروں کے استعمال کی تصدیق کی اور بتایا کہ رائل ایئرفورس کے ٹورنیڈو جی آر فورز طیاروں نے حمص سے 15 کلومیٹر دور فوجی تنصیبات پر میزائل داغے۔

دوسری جانب شام کی حکومت کا کہنا ہے کہ بیرونی جارحیت کا بھرپور جواب دیا گیا اور حملوں کے خلاف میزائل دفاعی نظام کو فعال کردیا گیا۔

شام کے سرکاری ٹی وی نے دعویٰ کیا کہ اس دفاعی نظام نے کئی کروز میزائل ہدف تک پہنچنے سے پہلے ہی تباہ کردیئے۔

واضح رہے کہ حملوں کا نشانہ بننے والے فوجی اڈے اور ایئرپورٹس پہلے ہی خالی کرالیے گئے تھے۔

امریکا اور اس کے اتحادیوں کا موقف

امریکا اور اس کے اتحادیوں کا موقف ہے کہ شامی صدر بشار الاسد کی فوج نے 7 سال کی خانہ جنگی کے دوران 50 بار کیمیائی ہتھیار استعمال کیے۔

نہتے شہریوں پر تازہ کیمیائی حملہ رواں ماہ 7 اپریل کو غوطہ کے شہر دوما پر کیا گیا، جس میں 70 سے زیادہ افراد جاں بحق اور سیکڑوں متاثر ہوئے، ان میں خواتین اور بچوں کی بھی بڑی تعداد شامل تھی۔

شام میں کیمیائی حملے کا ڈرامہ رچایا گیا، روس

فرانس نے بھی شام کے خلاف بھرپور عالمی رد عمل کا مطالبہ کیا تھا۔

دوسری جانب برطانیہ نے شام کے تنازع کے حوالے سے ہر صورت امریکا کا ساتھ دینے کا اعلان کیا تھا۔

امریکا اور اس کے اتحادیوں کی جانب سے شام میں کیمیائی حملے کا الزام روس پر عائد کیا گیا اور امریکی صدر کی جانب سے ماسکو کو خبردار بھی کیا گیا کہ وہ جلد یا تاخیر سے حملے کے لیے تیار رہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے روس نے کہا تھا کہ امریکا میزائل حملے کی بات کرکے جنگ کو دعوت دے رہا ہے اور جس جگہ سے شام پر حملہ ہوگا، روس اسی جگہ کو نشانہ بنائے گا۔

دوسری جانب شام کا کہنا تھا کہ امریکا اور یورپ دنیا کو جنگ کی طرف دھکیل رہے ہیں۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ