بریکنگ نیوز

پاکستان ٹوٹنے کا سنڈروم

fsb.jpg

” پاکستان ٹوٹنے کا سنڈروم”
تحریر ثاقب ملک
مظلوموں کو غدار اور ظالم بننے سے روکنے کا آسان طریقہ یہ ہے کہ انکو گلے لگا لیں. یوں حقیقی ملک دشمن عناصر فوراً الگ تھلگ کھڑے نظر آجائیں گے. لیکن اگر سب پر شک کے سائے لہراتے نظر آنے لگ جائیں تو یہ عدم تحفظ کی واضح علامت ہے آور عدم تحفظ ہی ظلم کرواتا، یا اسکی خاموش حمایت پر آمادہ رکھتا ہے.

اگر پختون تحفظ موومنٹ تمام پختونوں کی نمایندہ تنظیم نہیں ہے جو کہ درست بات ہے تو گھبرانا کیسا؟ ہمارے رائٹ ونگ کا المیہ ہی یہ ہے کہ انھیں جاگتے سوتے پاکستان توڑنے کی سازشیں نظر آتی ہیں. سازش سے انکار ممکن نہیں مگر اسکا مریض ہونا بھی لازمی نہیں. جناب یہ سازشیں صرف کمزور، عدم انصاف والے ، متعصب معاشروں پر ہی کامیاب ہوتی ہے. اس لئے جب تک ہمارا معاشرہ انصاف اور عزت نفس سے محروم ہے تب تک سازشوں کو اپنی دانائی سے پھونک نہ مارتے رہا کریں. اب وہ زمانے گئے کہ مائیں اپنے بچوں کو جنوں سے ڈراتی تھیں. اسی طرح اب وہ دور نہیں کہ جب پاکستان توڑنے کی سازش کا ڈراوا دیکر لوگوں کو خاموش رکھا جائے. بالکل ایسے ہی جیسے ہمارے لیفٹ ونگ اور سیکولر طبقے کو ہر کام کے پیچھے اسٹیبلشمنٹ کی سازش نظر آتی ہے. یہ مریضانہ رویے ہیں.

آرمی چیف کا طنزیہ بیان بھی مناسب نہیں تھا. آرمی چیف ہمارے محافظ اعلی ہیں تو انہیں بزرگ کی طرح برتاؤ کرنا چاہیئے. معاملات با آسانی بہتر ہوسکتے ہیں مگر دیکھنا یہ ہے کہ فوج کس حد تک تعاون کرتی ہے اور کب تک کرتی ہے؟. بارودی سرنگوں اور چیک پوسٹوں پر بہتری کے اقدامات شروع ہوچکے ہیں. یہ سلسلہ جاری رہنا بہت ضروری ہے. کیونکہ دوسری جانب یقیناً تحریک ہائی جیک کرنے کی کوششیں جاری ہیں. آرمی کے درپے ایک مخصوص طبقہ ہر موقع پر اپنے زہر بھرے نشتر لیکر پہنچ جاتا ہے اس کا ادراک رکھنا ہے مگر اس بنیاد پر سارے مطالبات کو بیک گراؤنڈ میں نہیں جانا چاہیئے. اگرچہ تحریک مکمل ہائی جیک ہو بھی گئی تو کیا جائز مطالبات کے حق سے دستبردار ہوجانا چاہئے؟.

ہمارے تمام حد سے زیادہ محب وطن لوگوں کو سمجھنا چاہئے کہ پورا مضمون اگر آپ دوسروں کو سازشی کہہ کر لتاڑیں گے اور پھر اک سطر لکھ کر کہ” مطالبات تو جائز ہیں انھیں حل ہونا چاہئے.” آپ ہاتھ جھاڑ کر بیٹھ جائیں گے تو اسے مظلوموں کو گلے لگانا نہیں کہتے.

علی وزیر کا ہذیان قابلِ مذمت ہے. ٹھیک ہے آپکے آدھ درجن بھر خاندان کے لوگ جان سے گئے انتہائی افسوس اور دکھ کی بات ہے مگر جس فوج کی آپ وردی اتارنا چاہتے اسکے ہزاروں جوان اپنی جان سے جا چکے ہیں. پاکستان مخالف نعرے بازی کی حمایت بھی ممکن نہیں. دوسری جانب پختون تحفظ موومنٹ والے بھی اپنے جائز مطالبات تلے ان نفرت آمیز رویوں کو اگنور کر رہے ہیں. تالی دونوں ہاتھوں سے ہی بجتی ہے. انہیں چاہیے کہ اپنی عوامی حمایت کو برقرار رکھنے کے لئے اپنے صفوں سے جھاگ اڑاتے انسانی اور لسانی بموں کو دور رکھیں.

خدشہ یہی ہے کہ اگلے چند دنوں میں کوئی سانحہ یا حادثہ نہ ہوجائے. ڈاکٹر عاصم اللہ بخش صاحب لکھ چکے ہیں کہ کسی بھی متوقع سانحے کو روکنے کے مکمل ذمہ داری ریاست کی ہے. یعنی ہمارے ادارے، ایجنسیوں کو مکمل چوکس رہنا ہوگا.

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ