بریکنگ نیوز

جسٹس اعجاز الاحسن نشانہ کیوں بنے ؟

FB_IMG_1523779864706.jpg

جسٹس اعجاز الاحسن نشانہ کیوں بنے؟؟؟
تحریر سید نصیر شاہ
پاناما کے پورے کیس کے دوران جو جج سب سے کم بولا اور سب اہم سوالات اٹھائے وہ جسٹس اعجاز الاحسن تھے۔جسٹس اعجاز الاحسن جو سوال پوچھتے تھے وہ اتنا اہم ہوتا تھا کہ اکثر وہ اس دن کی ہیڈ لائن بنتا تھا۔پھر جسٹس اعجاز الاحسن ہی تھے جنہوں نے 20اپریل کے فیصلے میں ایف زیڈ ای کا ذکر کردیا تھا۔جس پر دانیال عزیز کا ایک ویڈیو کلپ سامنے آیا تھا جس میں وہ نوازشریف کی موجودگی میں جسٹس اعجاز الاحسن کے بارے میں کہہ رہے ہیں اس جج کے بارےمیں ہم نے بہت کچھ اکھٹا کرلیا ہے۔اس کو اب جواب دینا پڑے گا اور اہم بات یہ ہے کہ دانیال عزیز جن تین بیانات پر توہین عدالت کے کیس کا سامنا کررہے ہیں ان میں سے دو جسٹس اعجاز الاحسن کے خلاف ہیں۔اس میں سے ایک وہی دھمکی آمیز بیان ہے جو انہوں نے جسٹس اعجاز الاحسن کو دیا تھا۔پھر جسٹس اعجاز الاحسن ہی تھے جنہوں نے شریف خاندان کی جے آئی ٹی میں پیشیوں پر کہا تھا کہ ان کی تمام پیشیوں میں حکمت عملی یہی رہی کہ جے آئی ٹی کے سامنے جاؤ تو کچھ بتاؤ نہیں،وہ خود کچھ سامنے رکھیں تو اس کا اعتراف نہ کرو،وہ کوئی دستاویزات مانگیں تو دو نہیں۔۔۔اورانہیں نکالنے دو اگر وہ خود کچھ نکال سکتے ہیں۔اس پر انہوں نے مزید کہا تھا کہ اب اگر جے آئی ٹی خود بہت کچھ نکال لائی ہے تو پھر شکایت کیسی؟؟؟
جسٹس اعجاز الاحسن ہی ملزم شریف خاندان کے ٹرائل کے نگران جج ہیں۔نوازشریف اور مریم نواز براہ راست پاناما بینچ کے ججز کے خلاف اشتعال پھیلا چکے ہیں۔جلسوں میں کہہ چکے ہیں کہ عوام ان پانچ ججز سے حساب مانگیں گے۔
گزشتہ چار ماہ سے چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے عوامی مفاد کے ایشوز پر جو جوڈیشل ایکٹیوزم شروع کر رکھا ہے اس میں مستقل طور پر جسٹس اعجاز الاحسن ان کے ساتھ بینچ میں شامل ہیں۔جسٹس اعجاز الاحسن کے بارے میں ہی چیف جسٹس نے کہا کہ انہوں نے برطانوی عدالت کا ایک فیصلہ نکالا ہے جس کے مطابق اگر عدلیہ کے خلاف یک طرفہ الزامات کا سلسلہ جاری ہوتو جج اس پر بول سکتے ہیں اور جواب دے سکتے ہیں۔گزشتہ چار ماہ میں جتنی بھی کرپٹ اشرافیہ اور مافیاز کے خلاف فیصلے آئے ہیں ان میں جسٹس اعجاز الاحسن کا دبنگ کردار ہے۔ایک ایسا جج جو تمام فائلیں پڑھ کر آتا ہے،جو انتہائی جرآت کے ساتھ فیصلے دیتے تھے۔جس کے راستے میں مفاد،لالچ اور خوف آڑے نہیں آتا اس کے گھر پر فائرنگ کرنے سے کچھ حاصل نہیں ہوگا اور پھر ایک ایسے وقت میں جب چیف جسٹس میاں ثاقب نثار اپنے تمام ججز اور خاص طور پر پاناما بینچ کے ججز کے ساتھ دل و جان سے کھڑے ہیں۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ