بریکنگ نیوز

قاتل لائن یا میٹرو لائن ٹرین

U45P5029T2D489162F28DT20120724160658.jpg

ر

تحریر احسن رضوی
لاھور میں پورے پنجاب کے صاف پانی، صحت، تعلیم اور عوامی فلاح و بہبود کے دیگر منصوبوں کا بجٹ اورنج لائن میٹرو ٹرین میں جھونکنے والے شہباز شریف نے اپنی ضد اور انا کی تسکین کے لیے 26 قیمتی انسانی جانوں کو بھی اس قاتل پراجیکٹ کی بھینٹ چڑھا چکا ہے.
آج لاہور بوھڑ والا چوک میں صبح دس بجے 22 سالہ عاصم اپنے کام پر جانے کے لیے گھر سے نکلا لیکن ٹھیک 5 منٹ کے بعد چند قدم کی دوری پر اورنج لائن میٹرو ٹرین کے لاہور ریلوے اسٹیشن پر کام کرتی کرینوں میں سے ایک کرین عاصم کو کچل گئی. عاصم اپنے گھر کا سہارا تھا اور اگلے ماہ اُس کی شادی تھی.
صبح دس بجے سے شام 6 بجے تک پنجاب پولیس نہ عاصم کی لاش حوالے کر رہی تھی نہ ایف آئی آر لانچ کر رہی تھی، شام کو اہل علاقہ نے مین علامہ اقبال روڈ کو بوھڑ والا چوک سے ٹائر جلا کر بلاک کردیا اور اپنے اہل خانہ سمیت سراپا احتجاج ہوئے.
پنجاب پولیس کے تمام افسران اس بات پر دباؤ بڑھا رہے تھے کہ عاصم کے والد کی جانب سے دی جانے والی ابتدائی درخواست میں سے اورنج لائن میٹرو ٹرین اور پاکستان ریلوے کا نام نکالا جائے تاکہ وہ ایک عام ایکسیڈنٹ کا پرچہ درج کرکے شہباز شریف کو اپنے نمک حلالی ہونے ثبوت دیں. چونکہ یہ علاقہ ریلوے اسٹیشن سے قریب تر ہے اور زیادہ تر آبادی ریلوے کوارٹرز پر مشتمل ہے اسی سبب اس مخصوص سائٹ پر پاکستان ریلوے سمیت دیگر اداروں کی دیو ہیکل کرین اندھا دُھند اورنج لائن میٹرو ٹرین کے مکمل کرنے کی تگ و دو میں مصروف رہتی ہیں جس کی ٹکر سے عاصم کچلا گیا.
یاد رہے اورنج لائن میٹرو ٹرین کی ضد اور انا میں جہاں لاہور کو کھنڈر بنایا گیا، پچاس سال سے رہائش پذیر عوام کو بے گھر کر دیا گیا، نصف دہائی سے جمے چھوٹے بڑے کاروبار کی واٹ لگائی گئی، کئی ہزار درخت گرائے گئے، لاہور کی آبادی کو خاک و دھول کے سبب مختلف بیماریوں کا عادی بنایا گیا اور لاہور کے آثارِ قدیمہ کے حُسن کو گرہن لگایا گیا وہاں عاصم کو ملا کر ابتک کُل 26 انسانی قیمتی جانیں شہباز شریف کی اس ڈھٹائی کی بھینٹ چڑھ چکی ہیں.
اورنج لائن میٹرو ٹرین پراجیکٹ پر کام کرنے والے درجن سے زائد مزدور اور باقی مختلف حادثات میں راہگیر قاتل لائن میٹرو ٹرین پراجیکٹ کے ہاتھوں لقمہ اجل بن چکے ہیں. اور ہر کیس میں پولیس اپنے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کرکے اس پراجیکٹ کا نام ایف آئی آر میں سے نکلوانے میں کامیاب ہوجاتی ہے.
ان 26 انسانی جانوں کے ضیاع کی ذمہ دار پنجاب حکومت ہے کہ جس نے اس پراجیکٹ کی تعمیر میں تمام عالمی سطح کی احتیاطی تدابیر اور سیفٹی کو بالائے طاق رکھ کر شہباز شریف کی شوبازی اور ذاتی تشہیر و تسکین کے لیے 26 قیمتی جانوں کا نذرانہ قاتل لائن میٹرو ٹرین پراجیکٹ کو چڑھایا اور نہ جانے یہ سلسلہ کب کہاں اور کیسے رُکے!
راقم الحروف کے تحریر کرتے وقت تک مقتول عاصم کی لاش اور ایف آئی آر لواحقین کے حوالے نہیں کی گئی ہے، وہ میرے پنڈ کا بابا رحمتا ہو، چاچا حوالدار ہو، تایا چوکیدار ہو یا پھوپھی منادی ہو، کوئی بھی اس قاتل لائن میٹرو ٹرین کے ہاتھوں شہید ہو جانے والے ان 26 انسانوں کا جواب طلبی کو راضی نہیں، نہ ہی کوئی نیوز چینل ان سانحات کی حقیقت سے پردہ اُٹھانے کو راضی ہے کیونکہ مرنے والے نہ تو سیاسی نہ ہی سماجی اور مذہبی کارکن تو ہرگز نہیں ہیں…………… بلکہ وہ تو عام انسان ہیں!
از: احسن رضوی

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ