بریکنگ نیوز

بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا ذمہ دار کون؟

Load-shedding-640x478.jpg

تحریر: عابد اقبال

2011 میں میاں نواز شریف نے پیپلز پارٹی کی حکومت کےخلاف صرف اس وجہ سے تحریک چلانے کا اعلان کیا کے لوڈشیڈنگ کی انتہا ہو چکی تھی اور پاور آوٹ ایجز نے انڈسٹریز کو کافی نقصان پہنچایا جس کی وجہ سے پاکستان کی معاشیات پر بھی کافی گہرے اثرات نمودار ہوئے۔ معاشی ترقی بجلی اور دوسرے وسائل کے ساتھ نتھی ہے، انویسٹرز کو بجلی بھی درکار ہے دوسری بہت چیزوں کے علاوہ!

آئیے ہم اسکا جائزہ لیتے ہیں کے خرابی کہاں سے شروع ہوئی تا کے ملک پاکستان کے عوام آسانی سے فیصلہ کر سکیں کے ذمہ دار کون ہیں۔

اگر ہم ایشین ڈیویلپمنٹ بینک کی 2006 کی رپورٹ کا جائزہ لیں تو ہمیں بہت آسانیاں مل جاتی ہیں جائزہ کے لئیے!

ایشین ڈیویلپمنٹ بینک کی رپورٹ میں ذکر ہے پاکستان کے بجلی کے منصوبہ جات کی امداد کے بارے میں اور ۱۹۹۰ کی دہائی کے اوائل کے بارے میں جب پاکستان 1500MW بجلی کے خسارے میں تھا اور لوڈشیڈنگ شروع تھی۔ ایسے میں حکومت پاکستان نے شھید بینظیر بھٹو کی سربراہی میں 1994 میں بجلی کے بحران سے نمٹنے کے لئیے بڑے پیمانے پر اصلاحات کیں اور نئی پاور پالیسی میں انڈیپینڈینٹ پاور پروڈیوسرز کو انویسٹمنٹ کی ترغیب دی گئی تا کے وہ بجلی بنا کر واپڈا کو فروخت کر سکیں، جس کے لئیے ایک ادارہ بنایا گیا جو کہ پرائیویٹ پاور اور انفراسٹرکچر بورڈ (PPIB) کے نام سے معرض وجود میں آیا, جسکا کام ون ونڈو سہولیات فراہم کرنا تھا IPPs کو اور ایک پُل کا کام کرنا تھا حکومت اور انویسٹرز کے بیچ میں۔1994 کی پاور پالیسی نے لوکل اور بین الاقوامی انویسٹرز کو پاکستان کی طرف کھینچا جس کی بدولت پاکستان کی طلب 1500MW خسارے سے ختم ہو کر 3000MW اضافی بجلی پر آگئی۔

یہ سب کچھ وزیر اعظم بینظیر بھٹو کے دوسرے دور حکومت میں ہوا جسکے دوران 3 بلین ڈالر کی سرمایہ کاری پاکستان میں بجلی کی پیداوار کے لئیے کی گئی۔ اسی دور میں انڈیا نے پاکستان سے بجلی خریدنے کےلئیے مذاکرات بھی کئیے۔ جس سے بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے کے جب شھید بینظیر بھٹو کی حکومت برخاست کی گئی تو پاکستان کے پاس وافر بجلی موجود تھی۔

اگلے بارہ سال پاکستان میں بجلی کے منصوبے سست روی کا شکار رہے اور 2007 تک ایک مرتبہ پھر پاکستان کے عوام کو اندھیروں نے آ گھیرا ، جب 2008 میں پاکستان پیپلز پارٹی نے حکومت سنبھالی تو ملک پاکستان پھر سے 3500MW بجلی کے خسارے میں پہنچ چکا تھا، کیونکہ میاں نواز شریف اور جنرل مشرف کوئی بھی خاطر خواہ بجلی کا منصوبہ نہ بنوا سکے سوائے جنرل مشرف کے دور میں 300MW کا چشمہ ٹو نیوکلئیر پاور یونٹ جو مئی 2011 میں کام کرنا شروع ہوا۔پیپلز پارٹی کی حکومت نے اپنے دور حکومت 2008-2013 میں بھی نا مساعد حالات کے باوجود 3400MW بجلی نیشنل گرڈ میں فراہم کی، نیلم جہلم ہائیڈرو پروجیکٹ پر کام شروع کیا جو کے اس سال اپریل کے آخر میں 969MW بجلی بنانا شروع کر دے گا۔ نیلم جہلم پروجیکٹ جب پیپلز پارٹی کی حکومت 2013 میں اختتام ہوئی تو 85 فیصد کام مکمل کر چکی تھی۔ اسکے علاوہ بھی بہت سے بجلی پیدا کرنے والے منصوبہ شروع کئیے گئے مگر اس وقت کے چیف جسٹس نے انہیں پایہ تکمیل تک پہنچنے نہیں دیا اور سو موٹو کے وار کر کے پاکستان کو اندھیروں میں رکھا گیا، جس کے پیچھے ن لیگ کی پنجاب حکومت اور میاں نواز شریف کا افتخار چوہدری کے ساتھ پردے کے پیچھے اشتراک کسی سے چھپا ہوا نہیں رہا۔

مندرجہ ذیل کچھ سرخیاں جو اسوقت کے اخبارات کی زینت بنیں:

پاکستان پیپلز پارٹی نے ہمیشہ پاکستان اور پاکستان کے عوام کے لئیے سوچا اور کام کیا ہے، ایسے بہت سے منصوبہ جات کا آپکو علم بھی ھو گا، نئے منصوبوں میں تھر کا منصوبہ ہے جو آنے والے وقتوں میں پاکستان کی معیشت کے لئیے انتہائی اہمیت کا حامل ہو گا۔ اس کے علاوہ CPEC کا منصوبہ جو صدر آصف علی ذرداری نے شھید ذوالفقار علی بھٹو کے ویژن کے مطابق شروع کیا۔ فیصلہ آپ نے کرنا ہے کس نے اس ملک کے لئیے کام کیا اور کس نے اندھیروں میں ڈوبویا!!!

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ