بریکنگ نیوز

شب برات اور سوشل میڈیا معافیاں

FB_IMG_1508787696664.jpg

شب براءت اور سوشل میڈیا معافی۔۔
تحریر ولائت حسین اعوان۔
“آج شب برات ہے۔پلیز پورے سال میں مجھ سے جو بھی غلطیاں گستاخیاں ہوئیں ہوں اور اس سے اپ کا دل دکھا ہو تو مجھے خدا کے واسطے معاف کر دیجیئے گا۔”
یہ ہے وہ ریڈی میڈ پیغام جو شب برات پر سوشل میڈیا پر کئی سالوں سے بہت ذوق و شوق سے شئیر کیا جاتا ہے۔
ہماری اکثریت کا مسئلہ یہ ہے کہ ہم لوگ کسی بھی مزہبی یا سماجی تہوار کا اصل مقصد سمجھنے یا عملی انسان بننے کے بجائے بے مقصد قسم کی خرافات رسمی جملوں بناوٹوں اور دنیاداری میں پڑے ہوتے ہیں۔
نماذ وظائف صدقہ خیرات عیدین شب برات شب قدر حج عمرہ شادی مرگ پر ہمارے روئیے دین سے زیادہ دنیا نبھانے پر ہوتے ہیں۔
اہک بات ہمیں زہن نشین کر لینی چاہیئے اور اس دھوکے سے نکلنا چاہیئے کہ سارا سال کسی کی غیبت کرنے،چغلی کھانے،دھوکہ دینے،بہتان لگانے ،جھوٹ بولنے،تضحیک آمیز مزاق کرنے،اسکے ساتھ منافقت، ظلم،ناانصافی،دل شکنی کرنے کے بعد آپ یہ سمجھتے ہیں کہ آپکی ایک پوسٹ،ایک وٹس ایپ پیغام سے آپکے سارے سال کے قصور خوش دلی سے معاف ہو سکتے ہیں تو اپ غلطی پر ہیں۔خاص طور پر اس حقیقت کو جو جانتا ہو کہ پچھلے کئی سالوں سے آپکا یہی وطیرہ ہے کہ آپ معافی مانگ کر اگلے سال پھر تازہ دم ہو کر اس شخص کی حق تلفی غیبت دل شکنی کرتے ہیں تو وہ آپکی اس ریڈی میڈ معافی کو بلکل بھی اہمیت نہیں دے گا۔

آپ کو معافی اور اپنی غلطیوں کی تلافی کا حقیقت میں خیال آ ہی گیا ہے تو زیادہ بہتر ہے کہ آپ اس کے پاس جا کر معافی مانگیں۔اگر یہ ممکن نہ ہو تو آئیندہ آنے والے سالوں میں ان لوگوں سے معاملات بہترین رکھیں جن سے اپ کو لگتا ہے کہ آپکے کسی عمل سے انکے دل دکھے ہوں گے یا آپ نے ان سے ناانصافی کی ہے۔تا کہ وہ خود اس بات کا احساس کر کے آپ سے خوش ہوں آپکے لیئے دعا گو ہوں کہ آپ اب ان کے حق میں بہتر ہیں۔۔لہزا کوشش کریں کے سارا سال اپنے معاملات لوگوں سے بہتر رکھیں۔

شب براءت جہاں عبادات کی رات ہے وہاں گناہوں غلطیوں اور غلط سماجی روئیوں سے برآت یعنی نجات یا انکے ترک کرنے کے عہد کا بھی نام ہے۔ اگر اب تک اپنے آپ کو بہتر نہیں کر سکے تو آج ہی رب سے سچا عہد کر کے ماضی کی غلطیوں کی تلافی مستقبل میں اپنے اچھے روئیوں سوچ اور عمل سے کریں۔تا کہ آپ کو کسی کے سامنے نہ سرمندہ ہونا پڑے نہ کوئی آپ سے دکھی ہو اور نہ آپکو زمانے کی بھیڑ چال کے ساتھ چل کر رسمی کام کرنے پڑیں۔
اللہ سے عبادات کی ادائیگی اور کوتاہی کا آپکا اپنا ذاتی معاملہ ہے۔آپکے ظاہر کرنے سے نہ کسی نے اس میں اپنی نیکیاں ڈال دینی ہیں یا آپکو اجر دے دینا ہے اور نہ اسے چھپانے سے آپ کے ثواب میں کمی واقع ہو جانی ہے ۔ لیکن بندوں کے حقوق کی ادائیگی میں خاص خیال رکھیں۔غیبت جھوٹ منافقت دھوکے بازی ظلم دل شکنی سے بچیں۔کسی کا مال یا حق غضب نہ کریں۔اپنی نیت صاف رکھیں ۔جو ہیں بس وہی نظر آئیں۔اپنے چہرے اپنی سوچ یا فطرت پر مصنوعی نقاب چڑھانے سے گریز کریں۔خوش رہیں لیکن دوسروں کی خوشی کو بھی عزیز رکھ کر۔جئیں اچھے طریقے سے لیکن دوسروں کو بھی اسی اچھے طریقے سے جینے کا حق جان کر دے کر یا مان کر۔۔۔
اللہ آپکو مجھے بہترین ہدائیت نصیب فرمائے۔۔اور ہمیں ہمیشہ اصلاح کی جانب گامزن رکھے۔آمین

مجھ سے خوش راضی ہیں تو میری صحت ایمان احساس اخلاص جیسی دولت میں برکت کی دعا کیجئے گا اور ناراض ہیں اختلاف رکھتے ہیں یا سمجھتے ہیں کہ میں نے آپکی کبھی بھی حق تلفی کی اپ سے بددیانتی کی یا آپکی توقعات پر پورا نہیں اتر سکا تو میری اصلاح کی دعا کیجئے گا۔
طالب دعا۔۔ولائیت حسین اعوان

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ