بریکنگ نیوز

چیف جسٹس کو پمز کے ڈاکٹروں نے ماموں بنا دیا

BA45FB8F-B300-4F9B-8159-5A8817DAFF9D.jpeg

رپورٹ : یاسر ملک

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کا پمز ہسپتال کا ہنگامی دورہ پمز ہسپتال انظامیہ اور سینیر ڈاکٹرز نے سب کچھ اچھا دیکھا کر چیف جسٹس سے داد وصول کر لی

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار  ہنگامی دورے پر  پمز ہسپتال پہنچے،،جسٹس سردار طارق مسعود اور جسٹس مظہر عالم خان میاں خیل بھی  ہمراہ تھے،چیف جسٹس نے شعبہ امراض قلب, نئی وارڈ ,ایمر جنسی کا دورہ کیا،اس موقع پر ہیلتھ بیٹ کور کرنے والے رپورٹرز کی بڑی تعداد بھی پمز ہسپتال میں موجود تھی چیف جسٹس  نے جب کارڈیک سینٹر کا دورہ کیا تو صحافیوں کی طرف سے چیف جسٹس کو کہا گیا کہ آپ سرجیکل اور میڈیکل وارڈ کا دورہ کرے جہاں ایک بیڈ پر دو دو مریض ہیں اسی دوران میں آگے ہوا اور کہا کہ چیف صاحب جیسے سپریم کورٹ کے بیٹ رپورٹر سپریم کورٹ کور کرتے ہیں اسی طرح ہم ہیلتھ رپورٹر ہیں آپ ہماری بھی بات سنے پمز ہسپتال کی انظامیہ آپ کو سب اچھے کی رپورٹ دے رہی ہے اسی دوران چیف جسٹس ثاقب نثار کے ساتھ آنے والےجسٹس مظہر عالم نے مجھے کہا کہ ایک دن میں سب ٹھیک نہیں ہو سکتا کون ہیں آپ اور اپنے سیکورٹی عملے کو کہا کہ ان کو پیچھے کرے اسی دوران میں نے کہا کہ میں دنیا ٹی وی سے ہوں جس پر سیکورٹی والے نے مجھے گزارش کی کے آپ پیچھے چلے جائے اسی دوران خواتین رپورٹر کی طرف سے بھی چیف جسٹس کو پمز ہسپتال کی ان جگہوں کی نشاندہی کروانے کی کوشیش کی گئی لیکن چیف جسٹس نے ایک نا سنی اور اپنا دورہ کرتے رہے جہاں جہاں ڈاکٹرز ان کو لے جاتے رہے اسی دوران ایکسپریس کے صحافی نعیم اصغر کو ایک مریض نے کہا کہ آپ میڈیا کے ہیں آپ چیف جسٹس کو بتائے کہ میرے بیٹے کے آپریشن کے لیے پمز ہسپتال نے ایک سال کا ٹائم دیا لیکن جب میں آج پمز آیا تو مزید ایک سال کا ٹائم دے دیا گیا جس پر نعیم اصغر نے چیف جسٹس سے بات کی تو انھوں نے پڑھے اور دیکھے بغیر  وہ پرچی بھی ڈاکٹر کو دے دنیا اخبار کے صحافی کی جانب سے کہا گیا کہ پمز ہسپتال میں ادویات کا سٹور جو ہے اس کی حالت بہت خراب ہے اور ساتھ میں میڈیکل وارڈ،سرجیکل وارڈ اور اوپی ڈی چیک کرنے کا کہا لیکن چیف جسٹس کی جانب سے ان کو بھی ایک ہی جواب دیا گیا آپ کیوں وہاں لے جانا چاہتے ہیں جو اچھے کام ہوئے ہیں ان کی بھی تعریف کرنی چاہیے اب اگر آپ نے دوبارہ ایسی بات کی تو میں ناراض ہو جاوں گا پھر اس کے بعد تمام صحافیوں نے فیصلہ کیا کہ اب کوئی سوال نہیں کرے گا اسی دوران چیف جسٹس نے مریضوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میں ریکیورمنٹ کر رہا ہوں۔ جلدی بہتری آئے گی۔ اہسپتال میں بستر اتنے کم کیوں ہیں, میں کام کرنا چاہتا ہوں آپ لوگ میرا ساتھ دیں.میں چاہتا ہوں کہ مریضوں کو بہتر سہولیات ملیں.اہسپتالوں کی حالت اب بہتر ہو رہی ہے.مجھے تھؤڑا وقت دیں. وقت کے ساتھ ساتھ سب ٹھیک ہو جائے گا.  پمز میں سب کچھ بہتر ہے،میں دو ماہ بعد پمز کا دوبارہ دورہ کروں گا. دیکھوں گا کتنی بہتری آئی ہے.ایک دن میں  وارڈز نہیں بنتے. تھوڑا وقت لگتا ہے.  پمز اہسپتال کی بہتری کے لئے کام کر رہا ہوں.  حالات بہت جلد بہتر ہو جائے گے اس کے بعد چیف جسٹس پمز ہسپتال سے روانہ ہو گئے 

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ