بریکنگ نیوز

پاکستان کے لیے ایجنٹ مطلوب ہے

736625fd-2fcd-4b27-b4d0-c691498b283a.jpg

تحریر : عبدالرحمن
پاکستان نے ۱۹۶۵ اور ۱۹۷۱میں دس سالوں سے بھی کم عرصے میں اوپر تلے دو بڑی جنگیں لڑیں۔ ۶۵ پینسٹھ کا تو مجھے علم نہیں کیا ہوا لیکن خواب کی طرح
۷۱ اکہتر کی جنگ کے دو چھوٹے چھوٹے واقعات اب بھی یاد آتے ہیں؛ والدہ کو گھر کے دروازے میں سوراخوں کو کپڑوں سے بند کرتے ہوئے دیکھتا ہوں۔ ریڈیو پر نشر ہدایات کے مطابق ہوائی حملے سے بچنے کے لیے ایسی حفاظتی تدابیر ضروری تھیں۔ کیونکہ میرے گاوں کے نزدیک ایک بیراج ہے جس پر فضائی دفاع نام کی کوئی شے سرے سے تھی ہی نہیں لیکن اس کو نشانہ بنانے کے لیے آنے والے بھارتی فضائیہ کے سورما بے خطر ادھر ادھر قریبی دیہات پر بم برسا جاتے۔ دوسرا مجھے دوران جنگ اور اس کے ختم ہونے کے کئی سال بعد تک لوگوں کا بے چارے پاگلوں پر بے پناہ ظلم یاد آتا ہے۔ جنگ کے غصے میں لوگ جہاں کسی مفلوک الحال کو دیکھتے اسے دشمن کا ایجنٹ سمجھ کر ایسی درگت بناتے کہ آج بھی یاد کرتا ہوں تو رونگٹے کھڑے ہو جاتے ہیں ۔ بیسویں صدی میں پاکستانی قوم کے خیال میں ایجنٹ اور جاسوس ایسے ہی بد حال کرداروں کے بہروپ میں ہوا کرتے تھے۔
لیکن موجودہ صدی میں جہاں زندگی کے ہر شعبے میں بہت سی حیران کن تبدیلیاں دیکھنے میں آئیں ان میں ایجنٹوں اور جاسوسوں کے بہروپ کا تبدیل ہونا بھی شامل ہے۔ اس تبدیلی کے انتظار میں ان سارے سالوں میں یوں لگتا ہے جیسے جاسوس حضرات کہیں دبکے رہے۔ لیکن جونہی معاشرے کی سوچ بدلتی دیکھی اور ماحول موافق ہوا چھٹ سے پینٹ کوٹ پہنے، عالی شان محلوں سے لمبی لمبی گاڑیوں میں قطار در قطار برآمد ہوئے۔ کیا شان و شوکت ہے؟ اب کوئی ان کی طرف میلی آنکھ سے دیکھنے کی جرات تو کرے۔ یا شاید لوگ بھی اب اتنے فارغ نہیں کہ جاسوسوں کا پیچھا کرتے پھریں۔ ویسے سوال یہ بھی ہے کہ پاکستان میں ان جاسوسوں نے چھوڑا ہی کیا ہے؟ جس کے لٹنے کا ڈر ہو، اب تو محافظ بھی نوکری کی تلاش میں ہیں۔
وہی جاسوس جو کل تک چھپتے پھرتے تھے اب ٹھاٹ سے پھرتے ہیں اور جہاں چاہتے ہیں پورے اہتمام سے اور ترنگ میں اپنے دیسی بدیسی آقاؤں کے گن گاتے ہیں۔ ان لوگوں کی شان اور اعتماد دیکھ کر بڑے بڑے شرفاء بھی ایجنٹی کا تاج سجانے کے لیے قطاروں میں لگے ہیں اور اس پیشے کے مقدس ہونے کی اسناد بانٹتے پھرتے ہیں۔ منافع کی بو سونگھتے ہی ذرائع ابلاغ اور سوشل میڈیا کی کوئی ایسی سکرین نہیں جس پر ایجنٹوں اور جاسوسوں کی منڈی سجنے کی خبر نہ ہوں۔ ہر نسل اور رنگ کا مال مارکیٹ میں وافر موجود ہونے کے اشتہاروں کا ایک نہ تھمنے والا طوفان برپا ہے۔ ایک مستقل نمائش لگی ہے جس میں ریمپ پر درشنی پریڈ سجتے ہی بڑے سوداگر تو کیا کمیشن خور بیوپاری اور دلال بھی قسمت آزمائی کرتے پھر رہے ہیں۔ آج کل یہودی، ہندو، عیسائی، عربی، امریکی اور پتا نہیں کس کس نسل کے تاجروں کے لیے خریداری کرنے والے بیوپاریوں پر قسمت کی دیوی بہت مہربان لگتی ہے۔ مال کی فراوانی (over supply ) کے ماحول میں وہ انتہائی سدھائے ہوئے، تربیت یافتہ اور اندھی وفاداری جیسے اعلی اوصاف والے مال میں سے بھی من پسند خریداری کرنے کے مزے لے رہے ہیں۔
آج کل منڈی میں مال زیادہ آ جانے کی وجہ سے قیمتیں گری ہوئی دیکھ کر خیال آیا کہ شاید یہی وہ وقت ہےجب پاکستان کے لیے بھی ایک آدھ سودا کیا جا سکتا ہے۔ بے شک اس کی قوت خرید بڑے سوداگروں جیسی تو نہیں لیکن مارکیٹ میں دستیاب مال سے واقفیت کی بدولت قسمت آزمائی کر لینے میں کوئی حرج نہیں۔ امید ہے ایک آدھ دانہ مناسب قیمت پر مل جائے گا۔ ویسے بھی پاکستان کے لیے تو شاید کوئی عام نسل جاسوس بھی چل جائے کیونکہ کام کی نوعیت بھی تو بہت آسان ہے۔ پاکستان نے اسے کب کسی دشمن کے خلاف استعمال کرنا ہے۔ اس کا کام تو بس اپنی ہی قوم کو بے وقوف بنانا ہے جو خود ہر وقت تیار اور بے چین رہتی ہے۔ پورا یقین ہے تھوڑی سی اداکاری، بس مناسب سی جھوٹ سے رغبت، دھوکہ دہی کا صرف بنیادی سا فن اور غیرت سے تھوڑی سی الجھن جیسی خوبیوں والا بھی اس معصوم قوم (بے وقوف کہنے سے ناراض ہو جاتی ہے) کو محفوظ اور روشن مستقبل کے خوابوں میں الجھا کر ایک دو دہائیاں تو گزار ہی جائے گا۔ اس وقت تک امید ہے اعلی نسل ایجنٹ حضرات یا تو پاکستان کا بندوبست کر چکے ہوں گے یا پھر جب کبھی منڈی میں دوبارہ بہتات کا دور آیا تو کوئی بہتر ڈھونڈ لیں گے۔ اگر مناسب سودا نہ ہوا تو دبئی سے منگوائے سیکنڈ ہینڈ یا ری کنڈیشنڈ سے بھی پاکستان کا کام یقینا چل جائے گا۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ