بریکنگ نیوز

سرگودھا میں تحریک انصاف کے امیدوار

211a4a0e-3421-43ae-936b-2d92fd36d5d4.jpg

تجزیہ ولائت حسین اعوان
کل محترم پروفیسر طاہر ملک صاحب نے آصف محمود صاحب کے کالم کو بنیاد بنا کر ایک پوسٹ کی جس میں آصف محمود صاحب نے پی ٹی آئی کے ضلع سرگودہا سے ٹکٹوں کی تقسیم پر اعتراضات اٹھا کر پاکستان تحریک انصاف پر سخت تنقید کرتے ہوئے کسی کا کہا ہوا ایک قابل اعتراض جملے کا بھی حوالہ دیا۔
میرا تعلق چونکہ سرگودہا سے ہے اور پی ٹی آئی کے چند امیدواران کو چونکہ میں ذاتی طور پر جانتا ہوں اور چند حلقوں سے واقفیت ہے اسلیئے جواب میں ایک مختصر سا کمنٹ کیا اور پروفیسر صاحب نے ہمیشہ کی طرع عزت افزائی حوصلہ افزائی فرماتے ہوئے اسے اپنی پوسٹ بنا کر میرا موقف بھی اپنے پیج سے شئیر کیا۔وقت کی قلت اور مصروفیت کی وجہ سے ذیادہ تفصیل سے اس وقت نہیں لکھ سکا۔ابھی گھر آ کر محترم ملک صاحب اور انکے پڑھنے والوں کی گہری سیاسی دلچسپی کے پیش نظر کچھ تفصیل سے لکھنے کا ارادہ کیا۔
محترم آصف محمود صاحب ایک عمدہ لکھاری اور معروف کالم نویس ہیں۔انکے لکھے کا میرے جیسے شخص کا جواب دینا سورج کو چراغ دکھانے کے مترادف ہو گا۔افسوس دکھ یہ ہوا کہ محترم آصف صاحب نے جزبات یا غصہ میں زمینی حقائق کو پرکھے جانے تحقیق کیئے بغیر یا علم ہونے کے باوجود اسے نظر انداز کر کے تحریک انصاف سے کچھ زیادہ بدگمانی ظاہر کر دی۔
سرگودہا کی قومی اسمبلی کی نشستوں پر شہر سے ابھی فیصلہ نہیں ہوا۔جبکہ باقی نشستوں پر پی پی سے آنے والے ندیم افضل چن تحصیل بھلوال بھیرہ سے،تحصیل شاہ پور ساہیوال سے سابق ضلع نائب ناظم مظہر قریشی کے بھائی سابق بیوروکریٹ ظفر قریشی،تحصیل سلانوالی سرگودہا سے ق لیگ کے سابق ایم پی اے اور سابق وفاقی وزیر انور علی چیمہ مرحوم کے بیٹے عامر سلطان چیمہ اور بھلوال کوٹ مومن حلقہ سے ق کے سابق ایم این اے غیاث میلہ کے بیٹے اسامہ میلہ کے ٹکٹ جماعت نے کنفرم کیئے ہیں۔
صوبائی حلقوں کے لیئے سابق ضلع ناظم انعام پراچہ کے بیٹے اور پی پی حکومت کے سابق وزیر خزانہ احسان پراچہ کے بھتیجے حسن انعام پراچہ،عامر چیمہ کے بیٹے منیب سلطان،عامر چیمہ کے کزنز اور 2013 کے پارٹی ٹکٹ ہولڈر فیصل گھمن اور سابق ایم پی اے فیصل فاروق چیمہ،سابق نائب ناظم تحصیل شاہ پور اور 2013 کے پی ٹی آئی کے ٹکٹ ہولڈر چوہدری افتخار حسین گوندل،پی ٹی آئی کے پرانے کارکن انصر نیازی،سابق ناظم تحصیل ساہیوال غلام اصغر لاہڑی،اور پی پی کے سابق ٹکٹ ہولڈر خالق داد پڈھیار کے ٹکٹ کنفرم ہوئے ہیں۔ضلع خوشاب کی دو سیٹ پر 2013 کے پی ٹی ائی کے ٹکٹ ہولڈرزگل اصغر بھگور اور سابق ایم این اے ملک عمر اسلم پر ہی اس الیکشن میں بھی جماعت نے اعتماد کیا۔
ذمینی حقائق یہ ہیں کہ ماسوائے ایک دو حلقوں کے پی ٹی آئی یا کسی بھی سیاسی جماعت کے پاس امیدواران منتخب کرنے کی اس سے بہترین چوائس نہیں تھی۔حلقہ میں 5۔۔7 الیکشن لڑنے والے یا الیکٹیبلز میں سے ٹاپ پر یہ ہیں۔

آج کے دور میں سیاسی جماعتیں سماجی جماعتیں نہیں ہیں۔مثبت اور منفی پہلو یہ ہے کہ یہ بھی ایک پرائیویٹ پبلک لمیٹڈ کمپنی بن چکی ہیں۔جس طرع کوئی بھی کمپنی اپنی ترقی اور مارکیٹ میں بہترین مقابلہ کے لیئےدوسری کمپنیوں سے لوگ لے کر آتی ہے سیاسی جماعتیں بھی آج کے دور میں اسی طرع کر رہی ہیں
لوگوں کے مزاج کا بھی سیاسی جماعتیں اور سیاسی لوگ ادراک نہ کریں تو وہ ناکام ہیں۔ہمارے لوگوں کی ترجیح یہ ہوتی ہے کہ جس کو وہ ووٹ دیں وہ ہمارے ساتھ ہر حق نا حق کام میں ساتھ ہو۔ظالم کو مظلوم بنوا دے اور مظلوم اگر ہمارا مخالف ہو تو اسکو مزید جوتے پڑوائے۔رعب و دبدبہ ہو۔گن مین کے جھرمٹ میں ہو۔جب ہماری خوشی غمی میں آئے تو آس پاس کے لوگوں کو ٹھیک ٹھاک پتہ چلے۔بھلے کرپٹ ہو۔لیکن ہماری کرپشن کا بھی محافظ ہو۔اب جب مارکیٹ میں جس چیز کی جس طرع سے ڈیمانڈ ہو گی۔کمپنی نے تو گاہک کے مزاج کے مطابق وہ پراڈکٹ ہی لانچ کرنی ہے۔ورنہ اسکی جگہ اسکے مقابلے میں کام کرنے والی کمپنی مارکیٹ شئیر لے لے گی۔یہ امیدوار بھی پراڈکٹ ہیں سیاسی جماعتوں کی۔ایک بندہ 5 سال لوگوں سے رابطے میں رہتا ہے۔ترقیاتی کام کراتا ہے اور الیکشن سے 2 دن پہلے دوسرا بندہ رقمیں بانٹ کر الیکشن جیت لے تو قصور وار کون ہے؟ موجودہ نظام میں رئیس ابن رئیس ہی آئے گا غریب ابن غریب کا تقریبا ناممکن ہے۔

ندیم چن کے حلقہ میں نون گروپ پراچہ گروپ پیر گروپ ہیں۔سب سے ذیادہ اگر کسی نے تعصب سے پاک ہو کر اور مخلص ہو کر علاقہ میں ترقیاتی کام کروائے تو پہلا نمبر ندیم چن صاحب کا ہے۔
میرا حلقہ عامر چیمہ اور فیصل چیمہ صاحب کا ہے۔کوئی بھی شخص اپنی معلومات تجزیہ کے لیئے یہ حلقہ وزٹ کرے۔عامر چیمہ کے والد انور علی چیمہ مرحوم کا کام سب کو نظر ایے گا اور مخالفین بھی گواہی دیں گے۔شہر کے کئی علاقوں میں جب لوگ سوئی گیس سے محروم تھے شہر سے دور دیہاتوں میں انھوں نے گھر گھر یہ سہولت پہنچائی۔بجلی سڑکیں گیس وہاں بھی پہنچائی جہاں کوئی بہت بڑی بستی محلہ نہیں تھا۔اب انکے بعد انکا بیٹا عامر چیمہ اس حلقہ کی عوام کے ساتھ اسی طرع رابطے میں ہے جس طرع انکے والد مرحوم۔فیصل چیمہ آزاد سیٹ جیت کر گو کہ نون لیگ میں رہے۔لیکن پنجاب میں کوئی آور آپشن انکے پاس نہ تھا۔یا تو وہ اپوزیشن میں بیٹھ کر 5 سال اپنے حلقہ کے لیئے بے فائدہ ثابت ہوتے یا حکومت کا حصہ بن کر عوام کی خدمت کرتے۔انھوں نے بحثیت ممبر صوبائی اسمبلی سکولوں نوکریوں اور ترقیاتی کاموں پر اپنی توجہ مرکوز رکھی۔چوہدری افتخار گوندل صاحب کو میں دہائیوں سے جانتا ہوں۔پی ٹی ائی کے ساتھ وابستگی پرانی ہے۔بلدیاتی انتخابات میں یونین لیول پر وہ انتہائی کامیاب ہیں اور بحثیت تحصیل نائب ناظم بہت اچھا وقت گزارا۔ آپ انکے علاقے میں جائیں اور انکی ساکھ اخلاق وہاں کے مقامی لوگوں سے پوچھیں۔شرافت کا پیکر اور انتہائی سادہ مزاج اور کرپشن سے ہزاروں میل دوری پر۔ عمر اسلم اسامہ میلہ انصر ہرل اصغر لاہڑی اپنے حلقہ انتخاب میں بہترین چوائس ہیں۔سب سے بڑی بات یہ ہے کہ یہ تمام لوگ جن کا میں نے زکر کیا رعونت سے پاک ہیں۔پہلے عام لوگ کسی ممبر پارلیمینٹ سے کام نکلوانے کے لیئے اپنے گاوں علاقے کے ملک چوہدری خان سردار وڈیرے کی منت ترلہ کر کے اسے ساتھ لے کر جاتے اب ان عام لوگوں کا ڈائریکٹ ان سیاستدانوں سے رابطہ ہے۔مزید یہ کہ یہ لوگ تھانہ کچہری کی سیاست نہیں کرتے۔باقی اعلی قیادت کے زمہ کے کام یہ لوگ کرنے سے قاصر ہیں اور پچھلے 30 سال سے جماعتی قائدین کی سیاست کا محور ڈنگ ٹپاو مہم اور زاتی مفاد ہی رہا۔
انصر نیازی بھی بلا شبہ جماعت کا بنیادی کارکن ہے اور جماعتی وابستگی کی پاداش میں صوبائی حکومت کی انتقامی کاروائیوں کے نتیجہ میں اسکا کاروبار بری طرع متاثر ہوا لیکن اسکے عزم میں فرق نہیں آیا ۔
ایک یونیورسٹی کالج سکول کا ہیڈ تبدیل ہو اور اسکی اس ادارے کے لیئے نیت صاف ہو تو اسی 10۔15۔25 سال پرانی ٹیم سے وہ پہلےسے بہترین کام لیتا ہے۔موجودہ 30۔35 سال پرانے لیڈران اور پارٹی ہیڈ کی قابلیت صلاحیت نیت کارکردگی ایک بچہ بھی جانتا ہے۔تو کیوں نہ ایک موقعہ نئی جماعت کے قائد کو بھی دے دیں۔ہو سکتا ہے وہ انہی پرانے لوگوں سے بہتر کام لے لے۔اگر اسکی نیت صاف ہو تو۔آخر کار آپکی گاڑی بھی بار بار ایک مکینک سے ٹھیک نہ ہو رہی پو تو آپ اسکو ایک انجان کے پاس لےجاتے ہیں۔یہ تو ملک کی بات ہے۔۔
اور اخری بات ملک کے ادارے مضبوط ہونے کے بجائے شخصیات مضبوط ہیں
جس شخص نے بھی ملک کے ادارے ٹھیک کر دئیے۔مضبوط کر دئیے ایک نظام بنا دیا۔تو یہ جدی پشتی سیاستدان کسی بھی جماعت میں ہوں۔کچھ فرق نہیں پڑے گا۔

یہ ٹھیک ہے کہ ترین صاحب یا کسی اور نے پارٹی پر سرمایہ لگایا ہو گا۔عمران پر خرچہ کیا ہو گا۔تو اور عمران کیا کرتا۔سیاسی جماعت چلانے کے لیئے زرائع کہاں سے پورا کرتا؟پہلے دوسرے مفاد پرستوں کی طرع مختلف حکومتوں کا حصہ بنتا۔نا جائز مال کماتا اور پھر اس سے اپنی جماعت کو پروموٹ کرتا؟؟اگر اس پر کوئی بھی پیسہ لگا رہا ہے اور انکا پیسہ بدعنوانی سے حاصل کیا ہوا ہے۔تو قصور کس کا ہے۔30 سال سے جو اقتدار میں ہیں وہ انکو کیوں نہیں پکڑتے؟؟
جس دن کسی بھی حکمران نے آ کر ہمارے ادارے پولیس صحت تعلیم انصف مضبوط اور اختیار کر دئیے اس دن حامد حمید ہو یا نادیہ عزیز عامر چیمہ ہو یا زوالفقار بھٹی تسنیم قریشی ہو یا ندیم چن کسی بھی جماعت کا حصہ ہوں سب بے معنی ہو گا۔
موجودہ صورت حال میں طلال چوہدری،عابد شیر علی،دانیال عزیز عقیل انجم یا حنیف عباسی کا مقابلہ کرنے کے لیئے کوئی پروفیسر کوئی ڈاکٹر کوئی شریف شخص کبھی بھی بہترین انتخاب نہیں ہوں گے۔کہ لوگوں کا شعور تبدیل کرتے ابھی سالوں لگنے ہیں۔اور انکو یہ باور کرانے میں کہ تعلیم یافتہ اور تہزیب یافتہ شریف انسان کسی بھی بدمعاش قبضہ گروپ ڈرگ سمگلر سے ذیادہ بہترین نمائیندہ ثابت ہو سکتا۔اللہ پاک اس ملک پر رحم فرمائے اور جو بھی آئے وہ ملک کے نظام کو درست کرے اور اللہ عوام کو سوچ شعور دے کہ وہ زاتی مفاد پسند ناپسند سے آگے بڑھ کر ملک کا سوچیں۔
ولائیت حسین اعوان بارسلونا سپین

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ