بریکنگ نیوز

لندن: ایک اہم قادیانی رہنماکا قبولِ اسلام

om.jpg

ڈاکٹرعمرفاروق احرار
”برق وباراں”

قادیانیت مکروفریب کا ایک ایساگورکھ دھنداہے کہ جس نے اسلام کا بہروپ اختیارکررکھاہے اوراپنے کفریہ عقائدونظریات کو چھپاکردنیابھرکے مسلمانوں اورغیرمسلموںکو مسلسل یہ دھوکہ دینے میںمصروف ہے کہ قادیانیت اوراسلام میں کوئی فرق نہیں ہے ،بلکہ قادیانیت ہی دراصل اسلام کا ماڈریٹ فیس اورسافٹ امیج ہے ،لیکن جب بھی کوئی صدقِ دل کے ساتھ قادیانیت کا مطالعہ کرتاہے،تواُس پر قادیانیت کا کفر واضح ہوتاچلاجاتاہے اوروہ آخرکارہدایت پاکراِسلام کے دامنِ رحمت میں آجاتاہے۔
عرب دنیامیں قادیانیت سے تائب ہونے کی جس لہرکا آغازاَگست2016ء میں نامورفلسطینی سابق قادیانی سکالرجناب ہانی طاہرکے اسلام قبول کرنے سے ہواتھا۔وہ سلسلہ رکا نہیں،بلکہ ہانی طاہرکی دعوت کے نتیجے میں درجنوں قادیانی مشرف بہ اسلام ہوئے۔اُن خوش نصیبوں میں شامل ہونے والوں میں تازہ اضافہ جناب عکرمہ نجمی کا ہے۔عکرمہ نجمی پیدائشی قادیانی تھے۔اُن کا تعلق اسرائیل کے شہرجلیل سے ہے۔وہ آل عودہ میں سے ہیں،اُن کے نانا خاندان میں قادیانیت قبول کرنے والے پہلے فرد تھے۔عکرمہ نجمی اسرائیل میں حیفہ کے مقام پر قائم کبابیرکے قادیانی مرکزکی مجلس منتظمہ کے رکن رہے اورقادیانیوں کے عربی ٹی وی چینل ایم ٹی اے کے ڈپٹی ڈائریکٹر کے فرائض بھی اداکیے۔وہ قادیانی جماعت کی طرف مختلف عرب ممالک میں کئی ذمہ داریاں بھی اداکرتے رہے، 2007ء میں جماعت کے حکم پر لندن منتقل ہوئے،ایک سال تک وہاں قادیانی مرکزمیں کام کیا۔لندن کی قادیانی عبادت گاہ بیت الفتوح میں نائب اما م ومؤذن ہونے کے ساتھ ساتھ اُن کا شمار قادیانی سربراہ مرزامسروراحمدکے خاص مقربین میں کیاجاتاتھا۔
پینتالیس سالہ عکرمہ نجمی نے فیس بک پر اَپنی کہانی بیان کی ہے۔اُن کے مطابق ہانی طاہرکے قادیانی مذہب پرمسلسل کیے جانے والے اعتراضات کاقادیانی جماعت تسلی بخش جواب دینے سے قاصرنظرآرہی تھی۔ جس نے عکرمہ سمیت تمام باشعورقادیانیوںکو اَپنے نظریات کے بارے میں شک وشبہ سے دوچارکررکھاتھا۔ ایک دن قادیانی سربراہ مرزامسروراحمدسے بات چیت میں ہانی طاہرکا ذکرچھڑاتو مرزامسرورنے عکرمہ سے اس بارے میں اُن کی رائے پوچھی تو عکرمہ نے مرزاپر واضح کیاکہ حقیقت یہ ہے کہ قادیانی جماعت کی طرف سے ہانی طاہرکی باتوں کا دندان شکن جواب نہیں دیا جارہا، مرزامسرور نے کہا کہ آپ تحقیق کریں اور اُن کا جواب دیں۔جس پر عکرمہ نجمی نے ہانی طاہرکے اعتراضات کا تنقیدی جائزہ لیناشروع کردیا،مگرعکرمہ کی تحقیق نے اُن پر قادیانیت کا اصل چہرہ بے نقاب کردیا۔مثلاً یہ کہ مرزاغلام احمدقادیانی کے بارے میں قادیانیوں کا دعویٰ ہے کہ انہوں نے عربی زبان کسی سے نہیں پڑھی ،بلکہ اللہ تعالی کی طرف اُن کوچالیس ہزار عربی الفاظ القائً سکھائے گئے تھے ،اِس دعوے کی حقیقت عکرمہ پر دورانِ تحقیق تب کھلی،جب اُن پر یہ منکشف ہواکہ مرزاقادیانی نے عربی ادب کی مشہور کتاب” مقامات حریری” کے 40صفحات میںسے ایک ہزار جملے چُرا کر اَپنی عربی کتابوں میں شامل کیے تھے جومرزا جیسے نبوت کے دعویدارکی قلمی خیانت، علمی بددیانتی اورسرقے کی بدترین مثال تھی۔لگاتاراَیسے مزیدہوشرباانکشافات وحقائق سامنے آ نے پر عکرمہ نجمی قادیانیت سے متنفرہوتے گئے۔
جب عکرمہ نجمی قادیانیت کی اصلیت سے مکمل واقف ہوگئے تواُنہوں نے مرزامسروراحمدکو تفصیلی خط لکھا۔جس میں انہوں نے لکھاکہ” جب ہمیں مرزاقادیانی کے برے اخلاق اور گندی گالیوں کا علم ہوا ، تو ہم بہت ہی صدمہ سے دوچار ہوئے ،مثلاً ایک کتاب میں اپنے مخالف کے لیے ایک ہزار لعنتیں لکھنا، اور ایک شادی شدہ عورت(محمدی بیگم) سے شادی پر اصراراور بار بارجلدنکاح ہونے کے اعلانات شائع کرنا، ہم ان سب باتوں کوناقابل قبول جُرم، اور باعث عار سمجھتے ہیں۔مرزاکی” نبوت ” کبھی بھی سچی ثابت نہ ہوئی، بلکہ ہمیشہ اُن کے خلاف ہی گئی،ہانی طاہرنے مرزا کی سینکڑوںنحوی غلطیوں،قرآن وحدیث، اور کتب تفسیر کی طرف منسوب کردہ اُن کے غلط اور مَن گھڑت حوالوں کی طویل فہرست پیش کی۔ مرزا کی کتاب”اعجاز مسیح” کا بھی مدلل رد لکھا، اور یہ مطالبہ بھی کیا کہ ایک غیر جانبدارانہ کمیشن تشکیل دیا جائے جو حق وباطل کا فیصلہ کرے ،لیکن ہماری جماعت ان کی کسی بھی بات کا مدلل جواب پیش نہ کرسکی،بلکہ قادیانی انفرادی طورپر جواب دینے کی ناکام کوشش کرتے رہے، میں اپنی تحقیق کے بعداب مرزاقادیانی کو نہ تو مہدی مانتا ہوں اورنہ مسیح موعود۔”عکرمہ نے یہ خط جب مرزامسرورکے حوالہ کیاتومرزانے کہاکہ ایک دو دن کا ٹائم دو، میں خط پڑھ کر دوبارہ ملاقات کرتا ہوں، مگر تقریبا چالیس منٹ بعدہی عکرمہ کوطلب کرلیاگیا ۔دوران ملاقات مرزامسرورنے یہ کہہ کر عکرمہ نجمی کو قادیانی جماعت سے نکالنے کا فیصلہ سنا دیاکہ آپ نے بانی جماعت کے متعلق غیر منطقی باتیں کی ہیں، جو ہم کسی صورت قبول نہیں کرسکتے ،اِس طرح بقول عکرمہ:”بغیر کسی بات چیت اور بغیر کسی کرامت دکھائے، یہ قصہ تمام ہوا، بلکہ وہ مرزا قادیانی کے دفاع میں اپنے کسی اعتقاد کا ذکر تک نہیں کرسکے ۔”
عکرمہ نے مرزامسرورکے نام اپنے خط میں مرزاکوقادیانیت ترک کرکے اِسلام قبول کرنے کی بھرپوردعوت بھی دی،جو بہت ہی فکرانگیزہے اورمیرے خیال میں ایسی دعوت ختم نبوت کے محاذپر سرگرم مجاہدینِ ختم نبوت کے مشن کامنشورہونی چاہیے۔عکرمہ نے لکھاکہ ”سر! مجھے آپ سے بہت امیدیں ہیں، کیونکہ آپ ہی وہ واحد شخصیت ہیں کہ جن کے پاس احمدیت کی اصلاح کا مؤثر حل موجود ہے ، آپ چاہیں تو موجودہ احمدیوں اور اُن کی اگلی نسل کو(کفرکی) اِس دلدل سے نکال سکتے ہیں، اور اللہ تعالی کو راضی کرسکتے ہیں، میرا مشورہ ہے کہ آپ اس جماعت کو نئے منشور سے تبدیل کرکے کوئی جمعیت خیریہ یا اس طرز پر کوئی نیا پروگرام پیش کریںاور اس جماعت کو خیر اور سلامتی پھیلانے والی جماعت میں تبدیل کردیں، میں اس نئے پروگرام میں آپ سے بھر پور تعاون کرنے کیلئے تیار ہوں، میں جانتا ہوں کہ آپ کے لیے ایک ہی بار ساراسچ بتادینا،لوگوں کوصدمے سے دوچارکردے گا ،اوراس کے منفی اثرات ،مثبت اثرات سے زیادہ ہوسکتے ہیں، لیکن حقائق سے پردہ پوشی کرلینا اورزیادہ بڑا جرم ہوگا، اگر واقعی آپ اس مسئلہ کو جڑ سے اکھاڑنے میں کامیاب ہوگئے تو یقین جانئے کہ تاریخ آپ کو سنہرے الفاظ میں یاد کرے گی اور اللہ تعالی بھی آپ سے راضی ہوجائے گا۔”

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ