بریکنگ نیوز

بیجنگ کانفرنس 2018 سے چین افریقہ دو طرفہ تعلقات نئی جہتوں کی جانب گامزن: چینی وزیرِ خارجہ

g-yi-640x360.jpg

(خصوصی رپورٹ):۔ بیجنگ کانفرنس 2018جس کا انعقاد رواں ہفتے سے چین افریقہ تعاون فورم کی جانب سے کیا جا رہا ہے، اس وقت خصوصی اہمیت اختیار کر گیا ہے اور دنیا بھر کی خصوصی توجہ حاصل کیئے ہوئے ہے اور امید ظاہر کی جا رہی ہے کہ 3ستمبر سے شروع ہونیوالے اس کانفرنس کے انعقاد سے چین اور افریقی ممالک کے مابین باہمی اور دو تعلقات کی مضبوطی کے حوالے سے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا۔ اس ضمن میں چینی وزیرِ خارجہ اور ریاستی کونسلر وانگ ائی نے کہا ہے کہ بیجنگ کانفرنس کا آغاز 3-4ستمبر کو بیجنگ میں ہو رہا ہے اور یہ کانفرنس چین اور افریقی ممالک کے مابین دو طرفہ تعلقات کی مضبوطی اور باہمی روابط کے حوالے سے ایک سنگِ میل کی اہمیت اختیار کر چکا ہے۔ اور اس فورم کے انعقاد سے طرفین میں روائیتی دوستی، اعتماد سازی، اور دفاعی اہمیت کے حوالے سے باہمی تعاون کو بھر پور مضبوطی حاصل ہو گی۔ چینی وزیرِ خارجہ سے واضح کیا کہ کیمونسٹ پارٹی آف چائینہ کی سنٹرل کمیٹی کے جنرل سیکرٹری شی جنپگ نے گزشتہ پانچ سالوں میں جس متحرک انداز میں افریقی ممالک کیساتھ باہمی تعلقات کے حوالے سے جو کوششیں کی ہے اور پانچ سالوں میں افریقہ کے چار دورے کیئے اور 140سے زائد افریقی رہنماؤں نے گہرے روابط کے حوالے سے ملاقاتیں کیں وہ تمام عوامل انکی افریقی ممالک کیساتھ باہمی روابط اور دو طرفہ تعلقات کی مضبوطی کی گواہ ہیں۔ چینی صدر شی جنپگ نے اپنے پہلے صدارتی دورے کا آغاز افریقہ کے دورے سے کیا اور دوسری مرتبہ چینی صدر منتخب ہونے کے بعد بھی انہوں نے اپنا پہلا غیر ملکی دورہ بھی افریقہ کا ہی کیا جس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے ہے انکی قیادت میں چین افریقی ممالک کیساتھ باہمی اور دو طرفہ تعلقات کی مضبوطی کے حوالے سے کس قدر سنجیدہ ہے۔ چینی وزیرِ خارجہ نے مزید کہا کہ چین اور افریقی ممالک کے فورم کی جانب سے 2015میں جوہانسبرگ میں جو کانفرنس منعقد ہوئی اس کانفرنس کے مشترکہ اعلامیہ کے حوالے سے چین اور افریقی ممالک نے باہمی اور دو طرفہ تعلقات کی مضبوطی کے حوالے سے تمام تر معاہدات پر تیزی سے عملد رامد یقینی بنایا اور مختلف شعبوں میں باہمی تعاون اور اعتماد سازی پر عملی اقدامات یقینی بنائے گئے اور اس طرح سے طرفین کے باہمی تعلقات کو تیز ترین ٹریک پر استوار کر دیا گیا۔ چینی وزیرِ خارجہ نے اپنے بیان میں کہا کہ چین اور افریقی ممالک کے مابین باہمی اعتماد سازی سے مختلف شعبوں میں دو طرفہ تعلقات کے حوالے سیاسی اور معاشی کے حوالے سے بہت اہم پیش رفت سامنے آئی ہے۔ چین اور افریقی ممالک باہمی اعتماد سازی کے سبب ہی مخلتف نوعیت کے سیاسی تبادلوں کو یقینی بنا رہے ہیں اور باہمی اعتماد کیساتھ ہی گورننس اور ڈیویلپمنٹ کے حوالے سے چین افریقی ممالک کو اپنے تجربات سے مستفید کر ہا ہے۔ اس طرح سے طرفین باہمی مفادات کو یقینی بناتے ہوئے ڈیویلپمنٹ کے راستے پر ایک دوسرے کی خود مختاری کو قبول کرتے ہوئے باہمی سپورٹ کو عمل کو تیزی سے آگے بڑھانے میں سنجیدہ اور مخلص کوششوں کو یقینی بنا رہے ہیں۔ واضح رہے کہ گزشتہ تین برسوں میں چین کی جانب سے 27سے زائد پارٹی عہدیداراین اور ریاستی قیادت نے افریقی ممالک کا دورہ کیا جبکہ اسی عرصے کے دوران افریقی ممالک کے تیس سے زائد ریاستی اور حکومتی عہدیداروں نے چین کا دورہ کیا۔ اسی طرح افریقی ممالک سے تعلق رکھنے والے7سے زائد قانونی باڈیز کے اعلی عہدیداروں اور9نائب وزیراظم اور نائب صدور نے چین کا دورہ کیا۔ اس حوالے سے ریاستی کونسلر وانگ ائی نے مزید واضح کیا کہ اس مختصر عرصے میں چین اور افریقی ممالک کے فورم کے تعاون سے طرفین میں مختلف شعبوں میں باہمی تعاون کے حوالے 24معاہدات طے پائیں ہیں جن میں مختلف شعبوں کے حوالے سے جامع تعاون اور اسٹریٹجک نوعیت کے معاہدات بھی شامل ہیں اور اس باہمی اعتماد سازی کے باعث گیمبیا، ساؤ ٹوم، پرنسپی اور برکینافاسو کے بھی چین کے ساتھ دو طرفہ تعلقات کا آغاز ہوا ہے۔ اس طرح سے چین اور افریقی مالک نے مختلف شعبوں میں باہمی اور عملی تعاون کے مثبت نتائج اور ثمرات حاصل کیئے ہیں اور 2015میں جوہانسبرگ کانفرنس کے حوالے سے طرفین کے مانین دو طرفہ اور عملی تعاون کے حوالے سے جو معاہدات طے پائیں تھے چین ان پراجیکٹس اور معاہدات کی تکمیل کے حوالے سے سنجیدہ کوششوں کو جاری رکھے ہوئے ہے۔ باہمی تجارت کے حوالے سے اس امر سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ چین گزشتہ نو سالوں سے مسلسل افریقی ممالک کا سب سے بڑا تجارتی شاکت دار ہے اور چین کی جانب سے افریقی ممالک میں سرمایہ کاری کا حجم110بلین ڈالر تک جا پہنچا ہے۔ اور گزشتہ چند سالوں میں چین اور افریقی ممالک کے مابین باہمی اور عملی تعاون کے فروغ کے حوالیسے بہت سے اہم پراجیکٹس کی تکمیل یقینی بنائی جا چکی ہے جن میں کینیا میں ممباسہ۔نیروبی ریلوے کا قیام، نائجیریا میں ابوجہ۔کندونہ ریلوے لائن کا قیام اور جنوبی افریقہ میں ہائیسینس انڈسٹریل پارک کی تکمیل اہم منصوبوں میں شامل ہیں ۔وانگ ائی نے کہا کہ چین اور افریقی ممالک باہمی تعاون اوردو طرفہ تعلقات کی مضبوطی کو حکومتی سطع کیساتھ ساتھ ان تعلقات کو تجارتی سطع پر تیزی سے پروان چڑھا رہے ہیں اور حکومتی اقدامات سے یہ دوطرفہ تعاون مارکیٹ کی سطع پر تیزی سے فروغ پا رہا ہے اور طرفین میں مختلف مصنوعات کی تجارت سے باہمی اعتماد اور تعاون کی عملی سطع پر مضبوطی سامنے آ رہی ہے۔ اور یہ باہمی تعاون سرمایہ کاری سے لیکر انجینرئنگ معاہدات تک تیزی سے پھیل رہا ہے۔ وانگ ائی نے چینی اور افریقی ممالک کے مابین تہذیبی حوالے سے ثقافتی وفود کے تبادلوں کو دو طرفہ تعلقات کی مضبوطی کے حوالے سے ایک اہم ترین پیش رفت قرار دیتے ہوئے کہا کہ طرفین میں ثقافتی وفود کے تبادلوں باہمی اعتماد سازی کے حوالے سے اہم ترین سنگِ میل کی حیثیت رکھتی ہے اور اس ضمن میں حالیہ سالوں میں چین۔ افریقہ یوتھ فیسٹول، چائینہ افریقہ تھنک ٹینک فورم، فورم برائے چائینہ افریقہ میڈیا، چین ۔افریقہ مشترکہ ریسرچ اینڈ ایکسچینج پروگرام اور اسی طرح چین اور افریقہ کے مابین اعلی سطعی ایک ڈائیلاگ فورم تشکیل کیا گیا ہے تاکہ انسدادِ غربت اور مشترکہ خوشحالی کو یقینی بنایا جا سکے۔ گزشتہ تین سالوں میں چین نے افریقی ممالک کو مختلف نوعیت کے20000اسکالرشپ مہیا کیئے ہیں اور افریقی ممالک کے 1700سے زائد تعلیمی مواقعوں سے مستفید ہونے کے حوالے سے وسائل مہیئا کیئے گئے ہیں، حالیہ چند سالوں میں چین اور افریقی ممالک کے مابین 133مشترکہ شہروں کے قیام کے حوالے سے انڈسٹینڈنگ کا اعلان کیا گیا ہے۔ اور 54کنفیوشس اداروں اور 27کنفیوشس کلاسرومز کا انعقاد کیا گیا ہے۔ ایک حالیہ رپورٹ کے مطابق ایک ملین سے زائد چینی شہری ہر سال چین کا دورہ کرتے ہیں اور تیس سے زائد افریقی سیاحتی مقامات چین سیاحوں کی آئیڈیل منزل کا درجہ اختیار کر چکی ہیں ۔ وانگ ائی نے مزید واضح کیا کہ چین اور افریقی ممالک کے مابین سیکوریٹی تعاون تیزی سے فروغ پا رہا ہے اور چین افریقی ممالک کی یونین کو انکے مسائل کے حل کے حوالے سے بہترین انداز میں سپورٹ کر رہا ہے۔ اور ممکنہ بحرانوں سے نمٹنے کے حوالے سے افریقی ممالک کو متعلقہ اہلیت کی فراہمی کے حوالے سے عملی اقدامات یقینی بنائے جا رہے ہیں۔ اس طرح سے چین سیکورٹی کونسل کے پانچ مستقل ارکان میں سے افریقی مسائل کے حوالے سے سب سے اہم ترین اور کلیدی کردار ادا کر رہا ہے۔ اور براعظم افریقہ کے مختلف کشیدہ علاقوں میں چین کی امن مشن کے 2000 سولجر کام کر رہے ہیں ۔ اس طرح سے چین کے بحری بیڑے پر مشتمل سمندری ہسپتال نے افریقہ کے بہت سے علاقوں کا دورہ کیا ہے اور کامیابی سے براعظم افریقہ کے گرد اپنا چکر مکمل کیا ہے اور افریقی لوگوں کو صحت کے حوالے سے اہم ترین سہولیات کی فراہمی یقینی بنائی ہے۔ اسی طرح چین گلف آف ایڈن اور صومالی پانیوں میں اپنی بحری افواج کے تیس بیج کی موجودگی یقینی بنا چکا ہے تاکہ غیر ملکی اور چینی بحری جہازوں کی اس علاقے میں سیکوریٹی یقینی بنائی جا سکے۔ چین اور افریقہ دنیا کے بڑے ترقی پزیر ممالک میں شامل ہیں اسی طرح ان ممالک میں دنیا کی ایک کثیر آبادی ترقی پزیر ہے، اس طرح چین اور افریقی ممالک کے مابین کثیر الجہتی معاہدات سے طرفین بھر پور استعفادہ حاصل کر سکتے ہیں ۔ لیکن عالمی منظر نامے میں جس قدر تیزی سے تبدیلیاں وقوع ہو رہی ہیں ، اس تناظر میں طرفین نے عالمی سطع پر تعاون کو مزید فروغ کا عزم کیا ہے۔ اس طرح سے چین اور افریقی ممالک نے اقوامِ متحدہ میں اصلاحات، ماحولیاتی تبدیلیوں، انسدادِ دہشت گردی، اور بین الاقوامی تنظیموں بشمول اقوام متحدہ کے تعلیمی، سائنسی اور ثقافتی تنظیموں کے انتخاب، عالمی ادارہِ صحت، اور بین الاقوامی سولِ ایوی ایشن کے حوالے سے طرفین نے باہمی روابط کو مربوط اور فعال کرنے کی اہمیت پر عزم کا اظہار کیا ہے۔اس تناظر میں چینی وزیرِ خارجہ نے کہا کہ چین اور افریقی ممالک کی ڈھائی بلین آبادی کا مستقبل ایک دوسرے سے مربوط اور وابسطہ ہے اور بیجنگ کانفرنس 2018کے حوالے سے طرفین باہمی روابط اور ایک مشترکہ کمیونٹی کے قیام کے حوالے سے تعاون بڑھانے کے لیے پر عزم ہیں

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ