بریکنگ نیوز

ایڈز کنٹرول: چین افریقہ مشترکہ اقدامات کے مثبت نتائج

DmWNgyNW0AEhl88.jpg

اسلام آباد(خصوصی رپورٹ) اقوامِ متحدہ کے ایڈز کنٹرول پروگرام کے ایک اعلی عہدایدار نے چین اور افریقہ کی جانب سے ایڈز اور ایچ آئی وی کنٹرول اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ چین اور افریقہ کی ایڈز کے خاتمے کے حوالے سے مشترکہ اقدامات کے مثبت نتائج سامنے آئیں ہیں۔
اقوامِ متحدہ کے ایڈز کنٹرول پروگرام کے عہدایدارمائیکل سیڈبئی نے گزشتہ ہفتے بیجنگ میں منعقدہ چین اور افریقہ کے مابین ایڈز کنٹرول پروگرام کے حوالے ایک اجلاس میں شرکت کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ چین نے افریقہ سے ایڈز کے خاتمے کے حوالے سے ایک موثر اور فعال کردار ادا کیا ہے اور ان مربوط کوششوں سے افریقہ میں ایڈز کے خاتمے کے حوالے سے مثبت نتائج سامنے آئیں ہیں۔
اقوامِ متحدہ کے ایڈز کنٹرول پروگرام کے ایگزیکٹو ڈائریکٹرمائیکل سیڈبئی نے کہا کہ چین میں ایڈز سے متاثرہ وائرس میں مبتلا آبادی کی شرح اعشاریہ ایک فیصد ہے جو اقوامِ متحدہ کی عالمی سطع پر موجود شرح اعشاریہ آٹھ فیصدسے بہت کم ہے لیکن چین نے عالمی سطع پر ایڈز کنٹرول پروگرام کے خاتمے اور متاثرہ لوگوں کی فلاح کے حوالے سے جس طرح سے چین میں عملی اقدامات کو یقینی بنایا ہے وہ دنیا کی دیگر ممالک کے لیے مشعلِ راہ ہے۔ اس حوالے سے عالمی ادارہِ صحت کے ڈائرئکٹر جنرل ایدونوم گیبرس نے کہا کہ عالمی سطع پر ایڈز کنٹرول پروگرام کے حوالے سے چینی کوششوں کو فراموش نہیں کیا جا سکتا۔ اور عالمی سطع پر ایڈز کے خاتمے اور بڑی آبادی والے ممال کو ایڈز سے بچاﺅ کے حوالے سے جو اقدامات کیئے ہیں وہ دیگر ممالک کے لیے مشعلِ راہ ہیں۔
چین اور افریقہ تعاون فورم کے حوالے سے چین افریقی ممالک میں ڈیویلپمنٹ اور اقتصادی استحکام کے حوالے سے جو کلیدی کردار گزشتہ چند عشروں سے کر رہا ہے وہ انتہائی قابلِ تحسین ہے لیکن جس طرح سے چین نے افریقی ممالک میں بنیادی صحت کے شعبے اور ایڈز سے بچاﺅ کے حوالے سے جو متحرک اور موثڑ فعال کردار ادا کیا ہے وہ دنیا بھر کے لیے ایک روشن مثال ہے۔ چین گزشتہ کئی عشروں سے افریقی ممالک سے ایڈز کے خاتمے اور متاثرہ آبادی کے لیے جو اقدامات یقینی بنائے ہوئے ہے اس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ چین افریقہ ممالک کے ساتھ اپنی دو طرفہ عملی تعلقات کو کس قدر اہمیت دیتا ہے۔
اور بنیادی صحت اور ایڈز کنٹرول پروگرام کے حوالے سے گزشتہ کئی عشروں سے چین مسلسل اپنی میڈیکل ٹیمز اور میڈیکل ورکرز کو افریقہ کے چالیس سے زائد ممالک میں بھیجتا رہا ہے اور ان چینی میڈیکل ٹیمز نے افریقی ممالک میں بنیادی صحت، ایبولا اور ایڈز کے خاتمے کے حوالے سے انتہائی اہم کردار ادا کیا ہے۔ اس ضمن میں ملاوی کی خاتونِ اول گرٹروٹ متویلا نے کہا کہ میں بہت خوش ہوں اور گشتہ چند عشروں سے چین نے جس طرح سے مختلف شعبوںکیساتھ ساتھ صحت کے شعبے میں افریقی ممالک کیساتھ باہمی تعاون اور سپورٹ کو یقینی بنایا ہے اس کے لیئے افریقہ چین کا ممنون ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملاوی چین کے عوامی صحت کے شعبے کے حوالے سے عملی اقدامات سے بہت متاثر ہے اور ملاوی حکومت اس ضمن میں چینی تجربات سے استعفادہ حاصل کرنا چاہتا ہے۔
واضح رہے کہ چین عالمی سطع پر ایڈز کی تشخیص اور بنیادی ٹیسٹ کے حوالے سے ایک عالمی معیار کی ایڈز لیبارٹری قائم کی ہے۔ اور اس لیبارٹری کی جدید سہولیات اور معیار عالمی سطع پر تسلیم کیا جا رہا ہے اور 2016میں ایچ آئی وی ٹیسٹ کے حوالے سے عالمی سطع پر جو بنیادی ٹیسٹ کیئے گئے انکا ایک تہائی چین میں کیا گیا۔ چین اور افریقی ممالک نے ایڈز وائرس کے خاتمے کے حوالے سے مشترکہ کوششوں سے اہم ترین اور مثبت نتائج حاصل کیئے ہیں ، اس حوالے سے گھانا کی خاتونِ اول ریبیکا اوکوفو نےءکہا کہ چین جدید ٹیکنالوجی اور بہتر ایکوپمنٹ سے افریقی ممالک کو ایڈز کے خاتمے اور کنٹرول کے لیے فاہدہ پہنچا رہا ہے جس سے افریقی ممالک چین کے شکر گزار ہیں ۔ صحت کے حوالے سے چین جن شعبے میں افریقی ممالک کو سپورٹ کر رہا ہے وہ انتہائی اہمیت کی حامل ہیں اور اس حولاے سے چین اور افریقی ممالک کے باہمی تعاون کو ایک نئی جہت حاصل ہو رہی ہے۔
رواں ہفتے بیجنگ میں منعقدہ چین افریقہ تعاون فورم کے حوالے سے بیجنگ کانفرنس 2018میں جن آٹھ بنیادوں شعبوں میں باہمی تعاون اور دو طرفہ عملی شراکت کو بڑھانے میں عزم کا اظہار کیا گیا ہے اس میں صحت کا شعبہ بھی شامل ہے جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ چین نہ صرف افریقی ممالک کی ڈیویلپمنٹ کے سنجیدہ ہے بلکہ چین افریقی ممالک کی آبادی کو بہتر صحت کی سہولیات کی فراہمی کے لیے بھی سنجیدہ ہے۔ چین نے گزشتہ چند عشروں میں افریقہ میں مختلف بیماریوں کے کنٹرول اور انسداد و بچاﺅ کے حوالے سے بنیادی سینٹرز کا ایک نیٹ ورک قائم کیا ہے جس سے افریقہ کی مقامی آبادی بہترین انداز میں مستفید ہورہی ہے۔ اس حوالے سے علاقائی اور عالمی سطع پر مختلف تنظیموں کی جانب سے چین کی کوششوں کو بھر پور پزیرائی حاصل ہو رہپی ہے۔
اس کیساتھ ساتھ چین کی سرمایہ کاری سے افریقہ میں مقامی سطع پر فارماکیوٹیکل کے شعبے کو بھی بھر پور ترویج حاصل ہو رہی ہے اور مقامی سطع پر افریقی ممالک اس شعبے میں چین کے تعاون سے مہارت حاصل کر رہے ہیں ۔ اس طرح سے چین نے اقوامِ متحدہ کے ایڈز کنٹرول پروگرام کے حوالے سے اہداف کی تکمیل میں ایک کلیدی کردار ادا کیا ہے۔اس ضمن میں عالمی ادارہِ صحت کے ڈائریکٹر جنرل تیڈروس نے کہا کہ چین کے تعاون سے ایجنڈا2030پر ڈیویلپمنٹ کے استحکام اور صحت کے حوالے سے اہداف کو کامیابی سے حصول یقینی بنا لیا جائیگا اور اس ضمن میں چینی کوششیں اہم ترین ہیں

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ