بریکنگ نیوز

چینی تعمیرو ترقی کشادگی و اصلاحات پر مبنی پالیسز پر منحصرہے۔ترجمان چینی وزارتِ کامرس

b0b2ab2c-0654-4a68-980a-d82601d63b0f.jpg

(خصوصی رپورٹ):۔ چینی وزارتِ کامرس نے امریکی الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ چین کی مستحکم تعمیرو ترقی کی بنیادی وجہ چین کا گزشتہ کئی عشروں سے جاری اصلاحات اور کشادگی سے متعلق پالیسی میکنزیم ہے اور انہی پالیسز کے تسلسل سے چین نے معاشی استحکام اور ڈیویلپمنٹ کو یقینی بنایا ہے، اس حوالے سے چینی وزارتِ کامرس نے امریکی بیانئیے کی شدید الفاظ میں نفی کی ہے کہ چین کی ڈیویلپمنٹ اور ترقی کی بنیادی وجہ امریکی سرمایہ کاری ہے۔ امریکی بیانئیے پر اپنا ردعمل دیتے ہوئے چینی وزارتِ کامرس کے ترجمان گاؤ فئنگ نے گزشتہ ہفتے ایک پریس کانفرنس کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ امریکی انتظامیہ نے اپنے بیانیے میں چین امریکہ تجارتی ومعاشی تعلقات اور ممکنہ اعدادوشمار کو فراموش کرتے ہوئے اپنی عوام کو بیواقوف بنانے کی ناکام سعی کی ہے۔ چینی وزارتِ کامرس کے ترجمان نے واضح کیا کہ چین نے 1987سے غیر ملکی سرمایہ کاری کے متعلق با قاعدہ ڈیٹا اکھٹا کرنا شروع کیا اور تب سے چین 2ٹریلین ڈالر مالیت کے غیر ملکی زخائر کو جمع اور مختلف حوالوں سے استعمال کر چکا ہے۔ اور اس مدت کے دوران امریکی سرمایہ کاری کا چین میں مجموعی حجم 81.36بلین ڈالر ریکارڈ کیا گیا ہے اور چین کی وزارتِ کامرس کے جاری اعدادوشمار کے مطابق چین میں غیر ملکی سرمایہ کاری کے مجموعی حجم میں امریکی سرمایہ کاری کی شرح چار فیصد سے زائد نہیں ریکارڈ کی گئی۔ چینی وزارتِ کامرس کے ترجمان گاؤ فینگ نے مزید واضح کیا کہ چین نے کبھی اس امر کی تردید نہیں کی کہ چین نے امریکی سرمایہ کاری سے فائدہ نہیں اٹھایا لیکن چین نے تعمیرو ترقی اور معاشی استحکام صرف اور صرف اصلاحات اور کشادگی پر مبنی پالیسی میکنزیم کی بدولت ہی حاصل کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چین نے ہمیشہ سے بیرونی دنیا کے دروازے چین پر اسی مقصد کے لیے کھولے کہ تمام تر فریقین یکساں انداز میں فاہدہ اٹھا سکیں اور چین نے اصلاحات اور کشادگی پر مبنی پالیسی میکنزیم کی بنیاد بھی باہمی مفادات اور یکساں فوائد کو مدنظر رکھتے ہوئے یقیینی بنایا۔ اس حوالے سے جس طرح سے چین نے عالمی معیشت کی بڑھوتری اور استحکام کے حوالے سے عملی اقدامات کیئے ہیں وہ سب کے سب پوری دنیا پر عیاں ہیں ۔ چین 2013کے آغاز سے عالمی معیشت کے استحکام کے حوالے سے تیس فیصد تک تعاون کر رہا ہے اور اس ضمن میں عالمی مالیاتی ادارے آئی ایم ایف کی حالیہ جاری رپورٹ اس امر کی تصدیق کرتی ہے کہ گزشتہ پانچ سالوں سے چین عالمی معیشت کو مستحکم کرنے کے حوالے سے دنیا بھر میں سب سے اہم کلیدی کردار ادا کر رہا ہے اور چین تعاون کی شرح تیس فیصد سے تجاوز کر چکی ہے۔ دوسری جانب عالمی تجارتی تنظیم (WTO)کے حالیہ جاری اعدادوشمار کے مطابق 2001سے 2017کے مابین چینی درامدات کا حجم عالمی سطع 3.8فیصد سے بڑھ کر 10.2فیصد تک اضافہ ہو چکا ہے۔ جبکہ دوسری جانب چین میں ملکی سطع پر درامدات کا حجم با لخصوص سروسز کے شعبے میں 2.7فیصد سے بڑھ کر9.1فیصد تک پہنچ چکا ہے۔ گاؤ نے مزید واضح کیا کہ چین نے ہمیشہ عالمی تجارتی تنظیم کے قواعدو ضوابط پر عمل درمد یقینی بنایا ہے اور اس تناظر میں چین امریکی انتظامیہ سے استدعا کرتا ہے کہ آزادانہ تجارت کی مخالفت اور یکطرفہ پالیسز کے حصول کے لیے امریکی انتظامیہ تحفظ پسندانہ پالیسز کو پروموٹ نہ کریں لیکن دوسری جانب واشنگٹن انتطامیہ مسلسل چین پر یکطرفہ پالیسز کے حوالے سے الزامات عائد کر رہا ہے۔ چینی وزارتِ کامرس کے ترجمان سے امریکی انتظامیہ کو پریس کانفرنس میں تجویز دی کہ امریکی انتظامیہ چین امریکہ اقتصادی تعاون کے حوالے سے اور عالمی معیشت کے استحکام اور بہتری کے مدنظر موثر اقدامات یقینی بنائیں تاکہ چین امریکہ اقتصادی تعاون کیساتھ ساتھ عالمی معیشت کو بھی فروغ حاصل ہوسکے۔ امریکی انتظامیہ چین کے خلاف تجارتی تضادات کو ہوا دے رہی ہے جبکہ دوسری جانب چین کسی صورت تجارتی کشیدگی کو پسند نہیں کرتا اور چین تمام تر فریقین کیساتھ باہمی دوطرفہ تجارتی روابط کا خواہشمند ہے۔ چینی وزارتِ کامرس کے ترجمان گاؤ فینگ نے مزید واضح کیا ہے کہ چین امریکہ کیساتھ باہمی دو طرفہ مضبوط تعلقات کا خواہاں ہے اور اس حوالے سے چین کے بیانیئے میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے۔ اور دوسری جانب چین اپنے قانونی حقوق و مفادات کے تحفظ کے حوالے سے بھی کسی قسم کی تبدیلی کا خواہاں نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکی انتظامیہ جس طرح تجارتی کشیدگی اور محاز آرائی کے حوالے سے منفی پروپیگنڈہ کر رہا ہے وہ تمام تر ناکام اور کمزور کوششیں ہیں اور سب سے پہلے امریکہ کے بیانیئے سے امریکی انتظامیہ دوسرے ممالک پر دباؤ بڑھانے کے پرانے حربے کا کام کر رہا ہے۔ لیکن تجارتی تنازعات کو بڑھا کر امریکہ کسی صورت تضادات حل کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکتا۔ لیکن دوسری جانب موجودہ حالات میں چینی معیشت مستحکم اور توانا ہے اور تیزی سے اعلی معیار کی ڈیویلپمنٹ کی جانب گامزن ہے اور چینی معیشت نئے عوامل کیساتھ تیزی سے فروغ پا رہی ہے۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ