بریکنگ نیوز

چین میں سمندر پر قائم عظیم الشان پل عالمی سطع پر چینی انجینئرینگ کا شاہکار

421E906200000578-0-image-a-45_1499440523477.jpg

(خصوصی رپورٹ):۔ حال ہی میں چین کی حکومت نے سمندر پر قائم دنیا کے عظیم ترین پل کا افتتاح کیا ہے ، یہ پل سمندر پر چینی صوبے گوانگ ڈونگ اور چین کے خود مختار علاقوں مکاؤ اور ہانگ کانگ کو آپس میں ملاتا ہے، گزشتہ ہفتے اس عظیم الشان پل کی افتتاحی تقریب کے بعد سے دنیا بھر میں چینی انجئینرینگ کو ایک شاہکار کے طور پر تسلیم کیا جا رہا ہے۔ اس عظیم الشان پل کی تعمیر کے حوالے سے درپیش چیلنجز اور مسائل کے حوالے سے بات کرتے ہوئے چینی صوبے گوانگ ڈونگ کء کمیشن برائے ڈیویلپمنٹ اینڈ ریفامزکے عہدیدارگئی چانگوی نے کہا کہ بلا شبہ یہ پل اپنی تعمیر کے حوالیسے جدید ٹیکنالوجی اور تعمیراتی فن کی معراج کی صورت ہے، انہوں نے کہا کہ اس پل کی تعمیر کے حوالے سے گونہ گوں ٹیکنالوجیکیل مسائل، تکنیکی چیلنجز اور تعمیراتی ورک لوڈ کے حوالے سے بہت سے اندوہناک مسائل کا سامنا کرنا ، انہوں نے کہا کہ گونگ ڈونگ صوبے، مکاؤ اور ہانگ کانگ کے مابین قائم کیا گیا یہ عظیم الشان پل اس حوالے سے بھی اہم ترین ہے کہ یہ چین کی قومی پالیسی برائےOne Country, Two Systemsکی عکاسی کرتا ہے اور اس پل کی تعمیر قانونی اور انتظامی عوامل کے حوالے سے چینی پالیسی برائے ایک ملک اور دہرا نظام کی بہترین عکاسی کے طور پر سامنے آئی ہے۔ گوانگ ڈونگ صوبے کے اعلی عہدیدار نے مزید واضح کیا کہ چین کی مرکزی حکومت کے تعاون کی بناء اس عظیم الشان شاہکار پل کی تعمیر کسی صورت ممکن نہیں بنائی جا سکتی تھی۔ ہانگ کانگ۔ژوہائی۔مکاؤ پل کی تعمیر نے ہانگ کانگ اور مکاؤ کو ایک مربوط روڈ انفراسٹرکچر کیساتھ پورے ملک کیساتھ منسلک کر دیا ہے اور اس کی تعمیر سے ہانگ کانگ ۔مکاؤ اور گوانگ ڈونگ کے ڈیلٹائی علاقے اور گریٹر بے ایریاز کو ڈیویلپمنٹ اور ترقی کے حوالے سے نئے مواقع مئیسر آئیں گے۔ اور اس پل کی تعمیر سے دریائے پرل کے علاقے میں ایک مثلث تشکیل پائی ہے جو آنیوالے سالوں میں ڈیویلپمنٹ ، ترقی اور خوشحالی کی نئی منازل طے کریگی۔ کیمونسٹ پارٹی آف چائینہ کی19ویں نیشنل کانگریس کے موقع پر ہانگ کانگ اور مکاؤ میں ڈیویلپمنٹ و ترقی کے حوالے سے جو بنیادی اہداف مقرر کیئے گئے تھے انکی تکمیل اور تعمیر کے حوالے سے بھی ژوہائی، ہانگ کانگ اور مکاؤ پل ایک بنیادی امر کی حیثیت رکھتا ہے جس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ چین کی مرکزی حکومت ان علاقوں کی ڈیویلپمنٹ کو بقیہ ملک کی ڈیویلپمنٹ سے ہم آہنگ کرنے کے لیے کس قدر سنجیدہ ہے۔ اس عظیم الشان پل کی تعمیراتی سٹرکچر کی مضبوطی کا اندازہ اس سے لگایا جا سکتا ہے کہ16ستمبر2018کو سمندری طوفان سپر مانگوٹ کی طوفانی ہواؤ ں کا مقابلہ اس پل نے کیا اس سمندری طوفان کے دوران ہواؤں کی رفتارپچپن میٹر فی سیکنڈ سے بھی تجاوز کر چکی تھیں لیکن اس قدر تندو تیز سمندری طوفان اس پل کو نقصان نہیں پہنچا سکا۔ اس سمندری طوفان کے گزرنے کے بعد جب اس پل کے بنیادی تعمیراتی ڈھانچے کا جائزہ لیا گیا تو اسے کسی قسم کا کوئی نقصان نہیں پہنچا تھا۔ اس کے علاوہ اس پل کے قرب وجوار میں قائم کیئے گئے مصنوعی جزیرے پر زیرِ تعمیر گھر ، ٹول اسٹیشن بھی کسی قسم کے نقصان سے محفوظ رہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ ایک سال میں 2017سے اب تک یہ عظیم الشان پل تین بڑے سمندری طوفانوں کا سامنا کر چکا ہے جس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے ژوہائی، ہانگ کانگ اور مکاؤ پل چینی تعمیراتی انجیئنرنگ اور تعمیراتی مہارت کا ایک منہ بولتا ثبوت ہے۔ اس پل کو عالمی سطع پر دیگر اعزازات بھی حاصل ہے سب سے پہلے تو ہانگ کانگ۔ژوہائی اور مکاؤ پل سمندر پر قائم دنیا کا سب سے طویل پل کا درجہ رکھتا ہے، اس کے علاوہ سمندر کے زیر زمین سب سے طویل سرنگ اس پل کے حوالے سے عالمی سطع پر سب سے طویل اور اور دنیا میں سب سے بڑے اسٹیل ڈھانچے کے حوالے سے بھی اس پل کو دنیا بھر میں بنائے گئے ایسے تمام پلوں پرمسابقتی برتری حاصل ہے۔ گزشتہ ہفتے اس پل کی افتتاحی تقریب تک اس پل کے حوالے سے قائم سایئنسی ریسرچ ٹیم اس پل کی تعمیر کے حوالے سے31تعمیراتی طریقہ کار کے ضمن میں مختلف سائنسی عوامل استعمال کر چکے تھے جن میں جدید تعمیراتی اسلوب کے حوالے سے تیرہ جدید ترین سافٹ وئیرز، اکتیس ایکوپمینٹ اور تین پراڈکٹس شامل تھیں۔ دوسری جانب چین کی مختلف سامانوں سے متعلق ایکویپمنٹ مینو فیکچرنگ کے حوالے سے جو صلاحیت حاصل اس کی مدد سے بھی اس عظیم الشان پل کی تعمیر میں بہت امدادی پہلو حاصل ہوئے۔ یہ پل چونکہ دریائے پرل کیاس تحفظاتی علاقے سے گزرتا ہے جسے مقامی چینی زبان میں وائیٹ ڈالفن کے نام سے جانا جاتا ہے اور دریائے پرل کے اس قدرتی ماحول کے علاقے میں موجود ڈالفنزکو کسی صورت اس پل کی تعمیر کے حوالے سے ایسے اقدام یقینی بنائے گئے کہ اس علاقے کی ڈالفنز متاثر نہ ہوں اور انہیں ہیاں سے کہیں اور منتقل نہ ہونا پڑے۔ اس طرح سے اس پل کے ڈیزائنرز نے ایسے ماحول دوست عوامل کو یقینی بنایا کہ سمندر میں کم سے کم تعمیراتی کام کیا جائے اور تعمیر اور استعادہ کرنے کے دوران کم سے کم شور ہو۔ ہانگ کانگ میں اس پل کے قر ب وجوار میں موجود ماہی گیر ان ڈولفنزکے علاقے تک سیاحت کے حوالے سے سیاحو ں کو لیجانے کا ایک نیا سلسلہ شروع ہو چکا ہے جس سے جہاں مقامی آؓبادی کو روزگار حاصل ہوا وہیں اس علاقے میں سیاحت کو فروغ حاصل ہوا ہے۔ پل کی تعمیر سے ڈالفنز کی تعداد اس علاقے میں متاثر نہیں ہوئی ہے اور اس عظیم الشان پل کے بیگ گراؤنڈ میں جب سیاح پانی میں جمپ لگاتی ڈولفنز کی تصویر کشی کرتے ہیں وہ ایک روح پرور منظر ہوتا ہے۔ اس پل کے مینجینگ ڈائریکٹر کے بیوروشو یانگلنگ نے کہا کہ ژوہائی، یانگ کانگ اور مکاؤ پل کی تعمیرچین کی ایک ملک اور دوہرے نظام کی بھر پور عکاسی کرتا ہے اور جس طرح سے سہ فریقی انداز میں اس پل کی تعمیہر کے حوالیسے معاونت اور یگانگت یقینی بنائی گئی ہے وہ ایک بہترین عمل امر ہے۔ اس کے علاوہ اس پل کی تعمیر، مینجمنٹ، اداراتی جدت پرازی، مختلف قوانین و ضوابط، تکینیکی معیارات، تعمیری سوچ وطریقہ کار کو جس خوش اسلوبی سے تین جگہوں پر یکسوئی سے یقینی بنایا گیا ہے وہ قابلِ تعریف ہے، اس پل کی تعمیر سے ہانگ کانگ، ژوہائی اور مکاؤ کے مابین درمیانی فاصلہ سمٹ کر صرف پنتالیس منٹس تک محدود ہو چکا ہے۔ اس پل کی تعمیر سے ہانگ کانگ حکومت کے اسپیشل انتظامی ریجن، اور مکاؤ کے اسپیشل انتظامی ریجن کو بہتر و مستحکم معیشت اور بلند معیارِ زندگی کے حوالے سے نئے مواقع حاصل ہونگے۔ اس پل کی تعمیر سے ہانگ کانگ کے دور افتادہ جزیرے لانٹو کو ترقی و ڈیویلپمنٹ کے اب کثیر مواقعے حاصل ہونگے اور پل کی تعمیر اس جزیرے اور گریٹر بے ایریاز کو باہم مربوط کر دیں گے۔ دوسری جانب مکاؤ نے اس پل کی تعمیر کے حوالے سے آئیندہ پانچ سال کے لیے انفراسٹرکچر عوامل کو یقینی بنانے کے لیے ایک نیا روڈ میپ تشکیل دیا ہے تاکہ قومی ڈیویلپمنٹ کو یقینی بنایا جا سکے۔ہانگ کانگ ٹوورازم بورڈ کے چیرمین پیٹر لیم نے کہا کہ اس پل کی تعمیر سے ایک گھنٹا ٹریولنگ سرکل پر مبنی ایک سیاحتی پروگرام شروع کیا گیا ہے جس میں شانزن، گوانگ ڈونگ ہائی اسپیڈ ریلوے کی مدد سے گوانگ دونگ، مکاؤ، گریٹر بے ایریا اورہانگ کی سیر کروائی جا ئے گی۔ دوسری جانب اس پل کی تعمیر سے مکاؤ میں موجود بہت سی صنعتوں کو بہتر فوائد حاصل ہونگے اور عالمی سیاحت اور اس علاقے کو عالمی سطع پر ایک نیارجحان حاصل ہوگا۔ اس ضمن میں مکاؤ کے انسٹی ٹیوٹ برائے ٹوورازم اسٹڈیز کے صدرچک خوان نے کہا کہ پل کی تعمیر سے ہانگ کانگ پرل دریا کے ڈیلٹائی علاقے کے مغربی خطوں کے زیادہ قریب ہو جائیگا اور بیشتر بڑے شہر چینگڈو، کنمنگ اور نیننگ ایک دوسرے کے زیادہ قریب ہونگے۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ