بریکنگ نیوز

چین کی مارکیٹ معیشت پر اعتراضات بلاجواز اور بے بنیاد ہیں

China-economy.jpg

(خصوصی رپورٹ):۔ امریکی انتظامیہ رواں سال2018کے آغاز سے اپنے کاروباری شراکتی ممالک بشمول چین کیساتھ اضافی ٹیرف کے نام پر تجارتی مشکلات میں اضافہ کیئے جا رہا ہے۔ اس ضمن میں امریکی انتظامیہ نے چین کے خلاف جاری تجارتی کشیدگی کی توجیع پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ چین کے خلاف تجارتی جنگ صرف اس وجہ سے جاری رکھے ہوئے ہیں کیونکہ چینی معیشت سوشلسٹ بنیادوں پر استوار ہے اور اس کا مارکیٹ معیشت سے کوئی تعلق نہیں ہے اور چین اس حوالے سے ایک مارکیٹ معیشت پر مبنی اکانومی نہیں ہے، ان عوامل اور الزامات کا اگر ٹھوس بنیادوں تجزیہ کیا جائے تو امریکی الزامات بے بنیاد اورحقائق کے منافی ہیں۔ سوشلسٹ مارکیٹ معیشت بنیادی طور پر دو نظاموں کا مشترکہ مجموعہ ہے جو ایک طرف سوشلزم پر مبنی ہے اور دوسری طرف مارکیٹ معیشت اس کی اساس ہے جبکہ دوسری جانب سرمایہ درانہ مارکیٹ معیشت دو بنیادی عوامل سرمایہ دارانہ نظام اور مارکیٹ معیشت پر استوار ہوتا ہے۔ان عوامل سے اندازہ ہوتا ہے کہ کسی بھی معاشی نظام میں مارکیٹ ایک کلیدی کردار ادا کرتی ہے اور یوں معیشت کے دونوں امور پر وسائل کی دستیابی کے حوالے سے مارکیٹ اہم ترین پہلو ہے۔ گزشتہ چار عشروں سے جب سے چین کی مرکزی حکومت نے ملک میں اصلاحات اور کشادگی پر مبنی پالیسز کا آغاز کیا ہے۔ چین نے ملک میں سوشلسٹ مارکیٹ معیشت کو بہتر اور موثر انداز میں فعال کرنے کے لییمربوط کوششوں کو اجاری رکھا اور متعلقہ اداروں میں اصلاحات اور پالیسز کے زریعے سے تمام امور کو مربوط انداز میں یقینی بنایا ہے۔ اس ضمن میں چین میں موجود ریاستی ملکیتی انٹر پرائسز کو موثر پالیسی سازی کیساتھ جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کیا گیا اور انہیں جدید اسلوب اور امور سے مزین کیا گیا۔ جس کی مدد سے یہ ریاستی ملکیتی انٹر پرائسزمارکیٹ معیشت کی حقیقی باڈیز کی صورت پروان چڑھ رہی ہیں ، اس طرح سے مرکزی حکومت نے نجی شعبے کو بھر پور انداز میں تقویت دی اور انہیں فعال اور موثر بنانے میں ایک بہتر کاروباری ماحول اور سرمایہ کاری کے فروغ کے حوالے سے ایک پر اعتماد ماحول فراہم کیا گیاہے۔ اس طرح سے ریاستی ملکیتی انٹر پراسئز اور نجی ملکیتی انٹر پرائسز متوازن انداز میں اپنی کارکردگی کو بہت سے بہترین بنانے میں کامیاب ہو رہے ہیں ، یوں تمام تر شعبے یکساں انداز میں پروان چڑھے اور انکے پیداواری عوامل مارکیٹ کی مسابقت کیساتھ اپنی پیداوار اور کارکردگی کو یقینی بنا رہے ہیں ۔ یوں کئی عشروں کی مربوط کوششوں اور جدو جہد سے چین ایک مارکیٹ معیشت کے تمام بنیادی تقاضوں کو حاصل کرنے میں کامیاب ہو سکا ہے۔ اس تناظر میں اگر آج کوئی اٹھ کر چین پر یہ تنقید شروع کر دے کہ چینی معیئشت کسی طور ایک مارکیٹ معیشت نہیں تو یہ الزامات غیر منطقی اور بے بنیاد ہیں۔ دوسری جانب یہ امر بھی قابلِ توجہ ہے کہ مارکیٹ معیشت کا کوئی ایک قابلِ قبول ماڈل موجود نہیں ہے، دنیا کے بیشتر ترقی یافتہ ممالک کی معیشتوں کا اگر بغور جائزہ لیا جائے تو انکا معاشی تصور اور ماڈل یکساں انداز میں کار فرما نہیں ہے، ان جدید معاشی قوتوں کے اقتصادی ماڈل مختلف ادوار میں مختلف خصوصیات کے حامل رہیں ہیں اور مختلف ممالک میں یہ اقتصادی ماڈل کسی طور بھی یکساں نہیں ہیں۔ اس ضمن میں اگر ترقی یافتہ ممالک کے اقتصادی نظام اور مارکیٹ معیشت کا جائزہ لیا جائے تو انکے ہاں مارکیٹ معیشت کا ہر گز یہ مطلب نہیں ہے کہ ان کے ہاں حکومتی مداخلت قطعی ہو نے کے برابر ہے یا یہ معیشتیں نجی ملکیتیں ہیں یا ریاستی ملکیتی ہیں ،صنعتی دور کے ابتداعی ادوار میں ترقی یافتہ ممالک کی بیشتر حکومتوں نے تجارتی پالیسز اور صنعتی پالیسز کے حوالے سے اور انکے نفاز کے حوالے سے اہم ترین کردار ادا کیا، دوسری عالمی جنگ کے بعد بیشتر ترقی یافتہ ممالک نے معاشی فیصلہ سازی کے حوالے سے کینیسئین رجحانات کو اپنایا جس کے تحت ملک میں اقتصادی عوامل کے حوالے سے ریاستی پالیسز، اداروں کو قومیائے جانے کے حوالے سے پالیسی سازی، ریاستی مداخلت سے متعلق پالسیز، میکرو کنٹرول اور ریاستی ملکیتی انٹر پراسئز سے متعلق امور کو ریاستی سطع پر پالیسی سے کنٹرول میں رکھا گیا۔ اس حوالے سے یہ تاثر نیو لبرل پالیسز کا بھی تھا کہ بیشتر ریاستی ملکیتی انٹر پرائسز اپنے پھیلائو کے حوالے سے سکڑ کر رہ گئے۔ دنیا کے بیشتر ترقی یافتہ ممالک میں معاشی استحکام کے حوالے سے حکومتی منصوبہ بندی کو فوقیت حاصل ہے، اس حوالے سے 2008کے بعد سے عالمی قساد بازاری کے بعد دنیا کے بیشتر ترقی یافتہ ممالک نے صنعتی پھیلائو سے متعلق پالیسز کو ترک کر دیا، اس طرح سے ان ممالک نے اپنے ہاں مینو فیکچرنگ اور صنعتوں سے متعلق پالیسز کو ایک نئے رجحانات سے ہم کنار کیا ، اس حوالے سے اس دور کے حوالے سے جرمنی کی انڈسٹری4.0اور امریکہ کی نیشنل اسٹریٹیجک پلان برائے جدید مینو فیکچرنگ اس دور کے دوارن پیش کیئے گئے۔ گزشتہ حالیہ چند برسوں میں امریکہ جو خود کو ایک آزاد مارکیٹ کے حوالے سے متعارف کرواتا رہا ہے، ان پالیسز کے برعکس اقتصادی محاز پر ریاستی دخل اندازی بہت حد تک بڑھ چکی ہے کہ امریکی انتظامیہ نے امریکی کمپنیز پر دبائو بڑھانا شروع کر دیا ہے کہ وہ بیرونِ ملک اپنے آپریشنز کو امریکہ منتقل کریں اور اعلی ٹیکنالوجی مصنوعات کی درامدات کو کم کریں اور چینی انٹر پرائسز پر امریکہ میں سرمایہ کاری کے حوالے سے امور پر کڑی شرائط عائد کر دی گئیں ہیں ۔ اس طرح سے امریکی انتظامیہ کی جانب سے ریاستی ملکیتی انٹر پرائسز میں بیجا مداخلت قطعی منطقی نہیں ہے، اس ضمن میں اگر امریکہ چین کی مارکیٹ میعشت پر صرف اس وجہ سے تنقید کرتا ہے کہ وہ بڑے پیمانے پر میکرو کنٹرول کو یقینی بناتا ہے اور ریاستی ملکیتی انٹر پرائسز کو ڈیویلپ کرتا ہے قطعی بے جواز ہے۔ ایسا میکنزیم امریکی انتظامیہ خود اپنے ہاں کمپنیز کو لاگو کرتا رہا ہے، اس ضمن میں امریکی انتظامیہ جو اعتراضات اور الزامات چین پر عائد کر رہا ہے وہ بلا جواز ہے کیونکہ امریکہ چین کے برعکس آزادانہ تجارت کا سب سے بڑا ناقد بن چکا ہے، امریکہ تجارتی خسارے کو کم کرنے کے لیے آزادانہ تجارت کی مخالفت کر رہا ہے اور اسی بناء پر امریکہ چین کے خلاف تجارتی محاز آرائی اور تجارتی کشیدگی کو بڑھانے پر مصر ہے تاکہ اپنی کوتہائیوں کو اس تجارتی جنگی کیفیت سے چھپا سکے، درحیقیت امریکی قیادت چینی ڈیویلپمنٹ کے تیزی سے بڑھتے عالمی اثرو رسوخ سے خائف ہے اور خود تمام مفادات حاصل کرنے کا خواہاں ہے۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top

blog lam dep | toc dep | giam can nhanh

|

toc ngan dep 2016 | duong da dep | 999+ kieu vay dep 2016

| toc dep 2016 | du lichdia diem an uong

xem hai

the best premium magento themes

dat ten cho con

áo sơ mi nữ

giảm cân nhanh

kiểu tóc đẹp

đặt tên hay cho con

xu hướng thời trangPhunuso.vn

shop giày nữ

giày lười nữgiày thể thao nữthời trang f5Responsive WordPress Themenha cap 4 nong thonmau biet thu deptoc dephouse beautifulgiay the thao nugiay luoi nutạp chí phụ nữhardware resourcesshop giày lườithời trang nam hàn quốcgiày hàn quốcgiày nam 2015shop giày onlineáo sơ mi hàn quốcshop thời trang nam nữdiễn đàn người tiêu dùngdiễn đàn thời tranggiày thể thao nữ hcmphụ kiện thời trang giá rẻ