بریکنگ نیوز

اسٹیل مل کی تعمیر نو| روس نے رضامندی ظاہر کر دی* *اسٹیل مل روس پاک دوستی کا اظہار ہے| ماریہ زخارووا ترجمان وزارت خارجہ*

images-3.jpeg

*

ماسکو (صدائے روس) 19 جون 2020، روس نے پاکستان اسٹیل کراچی کی جدید کاری میں اپنی شرکت پر رضامندی پر آمادگی کا اظھار کیا ہے. یاد رہے کہ سوویت ماہرین نے 1985 میں پاکستان اسٹیل کی تعمیر کو مکمل کیا تھا ۔ اس بات کا اظھار روسی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریہ زاخارووا نے اپنی معمول کی بریفنگ میں روس میں مقیم پاکستانی نژاد صحافی اشتیاق ہمدانی کے اس سوال کہ سویت یونین کی مدد سے ستر کی دہائی میں تعمیر کی گئی اسٹیل مل اس وقت بدترین بحران کا شکار ہے ، حکومت نے نجکاری اور تمام کارکنوں کو برطرف کرنے کا فیصلہ کیا ہے کیا آپ ہمیں ہمارے ممالک کے مابین دوطرفہ تعاون کے فریم ورک میں پاکستان اسٹیل مل کی پیداواری صلاحیت میں اضافے کے ضمن میں روسی تعاون کی حد کے بارے میں بتاسکتی ہیں ، کے جواب میں آج ہفتہ وار بریفنگ میں کہی۔
ماریہ ذخارووا کا کہنا تھا کہ ستر کی دہائی میں سوویت ماہرین کی مدد سے کراچی اسٹیل مل کو تعمیر کیا گیا ،ہمارے علم میں ہے کہ یہ طویل عرصے سے بحران کا شکار ھے کراچی اسٹیل مل پاکستان کا ایک اہم صنعتی ادارہ ہے۔حالیہ برسوں میں ، جہاں تک ہم جانتے ہیں ، مختلف وجوہات کی بنا پر ، اسٹیل ملز کام نہیں کر رہی.
تاہم ، ماریہ ذخارووا نےزور دیا کہ پاکستانی فریق کو سب سے پہلے پلانٹ کے مستقبل کے بارے میں فیصلہ کرنا ہوگا ، خاص طور پر یہ کہ آیا اس کی نجکاری کی جائے گی۔ متعدد روسی کمپنیاں پلانٹ کے جدید کاری کے منصوبے میں حصہ لینے پر غور کرنے کے لئے تیار ہیں۔تاہم ، اس کی نجکاری کے بارے میں ، روسی کاروباری اداروں کی شرکت کے بارے میں اسلام آباد کو حتمی فیصلہ کرنا ہو گا جس کے بعد ہی ہمارے لئے یہ ممکن ہوسکتا ہے کہ پاکستان سٹیل مل کی تعمیر نو اور جدید کاری میں حصہ لے سکیں۔

شیئر کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Top